Abbottabad operation, how American planes managed to escape from Pakistan’s F-16 plane, biggest claim so far

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی کمانڈوز نے ایبٹ آباد آپریشن کے ذریعے القاعدہ کے سربراہ اسامہ بن لادن کو قتل کیا تو دعویٰ کیا گیا کہ پاکستان اس امریکی آپریشن سے لاعلم رہا، مگر اب اس حوالے سے ایک اور تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آ گیا ہے۔ ویب سائٹ پروپاکستانی کے مطابق ریٹائرڈ چیف وارنٹ آفیسرڈوگلس اینگلین اس آپریشن میں اہم کردار نبھا رہے تھے۔ جب بلیک ہاک ہیلی کاپٹر تباہ ہو گیا تو ایک ایم ایچ 47جی شینوک ہیلی کاپٹر امریکی فوج کی ’کوئیک ری ایکشن فورس‘ کی ٹیم کو لے کر اسامہ بن لادن کے کمپاﺅنڈ تک آیا۔ ڈوگلس اینگلین اس ہیلی کاپٹر کے پائلٹ تھے۔ اب انہوں نے دعویٰ کر ڈالاہے کہ پاک فضائیہ کا ایک ایف 16ایس لڑاکا طیارہ ان کے پیچھے آیا اور تین بار ان کے ہیلی کاپٹر پر میزائل فائر کرنے کی کوشش کی۔

ڈوگلس نے بتایا ہے کہ یہ ایک الیکٹرانک جنگ تھی جو میں نے جیت لی اور پاک فضائیہ کے ایف 16طیارے سے بچ کر واپس افغانستان پہنچنے میں کامیاب ہو گیا۔ اس الیکٹرانک لڑائی میں پاک فضائیہ کے ایف 16طیارے سے میزائل نکل ہی نہیں پائے اور اس کا پائلٹ ناکام واپس لوٹ گیا۔ رپورٹ کے مطابق ڈوگلس کی طرف سے یہ نہیں بتایا گیا کہ یہ الیکٹرانک لڑائی کس نوعیت کی تھی اور اس میں کس طرح کے الیکٹرانک وارفیئر سسٹمز استعمال ہوئے جو ڈوگلس کے ہیلی کاپٹر میں نصب تھے، جن کی وجہ سے ایف 16طیارہ میزائل فائر کرنے میں ناکام رہا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.