When 10th Class and 12nd Class Exams will Held ? Education Minster revealed Dates

وفاقی وزیرتعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ ملک بھر میں بورڈ امتحانات 15 جون کے بعد شروع ہوں گے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں شفقت محمود نے کہا کہ ‘بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس (آئی پی ای ایم سی) کا اجلاس گزشتہ روز منعقد ہوا اور فیصلہ کیا گیا کہ بورڈ امتحانات 15 جون کے بعد شروع ہوں گے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘انٹرمیڈیٹ اور میٹرک کے امتحانات کو ترجیح دی جائے گی تاکہ نتائج جامعات کے داخلوں سے قبل آسکیں’۔

وفاقی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ ‘متعلقہ بورڈز حتمی تاریخ کا اعلان کریں گے لیکن اصولی طور پر امتحانات 15 جون کے بعد شروع ہوں گے، جس میں بارھویں اور میٹرک کو اولیت دی جائے گی جس کے بعد گیارھویں اور نویں جماعت کے امتحانات ہوں گے’۔

قبل ازیں انہوں نے کہا تھا کہ نویں اور گیارھویں جماعت کے امتحانات متعلقہ بورڈز کے ٹائم ٹیبل کے مطابق ہوں گے اور امتحانات نہ ہونے سے متعلق افواہوں میں کوئی سچائی نہیں ہے۔

یاد رہے کہ 27 اپریل کو وزارت تعلیم نے ملک بھر میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر کیمبرج سسٹم سمیت تمام امتحانات 15 جون تک ملتوی کرنے کا اعلان کردیا تھا۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا تھا کہ 18 اپریل کو ہم نے این سی او سی کے آخری اجلاس میں فیصلہ کیا تھا کہ امتحانات کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا لیکن اس کے بعد سے 27 اپریل تک بیماری میں بہت تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم شاید ایک ایسی صورتحال کی جانب بڑھ رہے ہیں جہاں ہمیں زیادہ انفیکشن کے حامل علاقوں کا لاک ڈاؤن کرنا پڑے لہٰذا اسد عمر کی زیر صدارت ہونے والے این سی او سی کے اجلاس میں یہ متفقہ فیصلہ کیا گیا کہ 15 جون تک کوئی امتحان نہیں ہوں گے۔

شفقت محمود نے کہا تھا کہ آج سے لے کر 15 جون تک کوئی امتحان نہیں ہو گا اور نویں سے 12ویں جماعت کے جن امتحانات کو مئی کے آخر میں شروع ہونا تھا، انہیں مزید ملتوی کردیا گیا ہے اور 15 جون تک کوئی امتحان نہیں ہو گا۔

انہوں نے کہا تھا کہ ہم حالات کا جائزہ لیتے رہیں گے اور مئی کے وسط یا تیسرے ہفتے میں بیماری کا جائزہ لے کر فیصلہ کریں گے کہ ان امتحانات کو اور آگے لے کر جانا ہے یا ان کا آغاز کرنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر 15 جون کے بعد امتحانات ہوتے ہیں تو یہ جولائی سے اگست تک طوالت اختیار کر سکتے ہیں۔

وفاقی وزیر تعلیم نے کہا تھا کہ جو بچے پاکستان کی جامعات میں جانا چاہتے ہیں ان کے لیے ہم اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ جنوری تک ایڈمیشن ہوتے رہیں تاکہ بچوں کو ایڈمیشن اور یونیورسٹی جانے میں کوئی مسئلہ نہ ہو۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.