Man left clinging to shattered glass bridge in northern China

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) چین کے ایک سیاحتی مقام پر سینکڑوں فٹ کی بلندی پر بنائے گئے شیشے کے ایک پل کی ویڈیوز اور تصاویر نے دنیا میں تہلکہ مچا دیا تھا۔ اس پل کے متعلق کئی لوگ وسوسے کا شکار ہوئے کہ اگر شیشہ ٹوٹ گیا تو اس کے اوپر چلنے والوں کا کیا حشر ہو گا؟ تاہم کئی لوگوں کا کہنا تھا کہ یہ شیشہ انتہائی مضبوط ہے جو کبھی نہیں ٹوٹ سکتا، مگر ان لوگوں کا یہ یقین باطل ثابت ہوا ہے اور بالآخر وہی ہوا جس کا خدشہ اس پل کے متعلق ظاہر کیا جا رہا تھا۔

میل آن لائن کے مطابق انتہائی تیز رفتار ہوا چلنے پر اس پل کا شیشہ ٹکڑے ٹکڑے ہو گیا اور اس وقت اس پر موجود سیاح اطراف میں لگے ڈنڈوں سے لٹکتا رہ گیا۔

رپورٹ کے مطابق بتایا جا رہا ہے کہ جمعہ کے روز اس علاقے میں 90میل (تقریباً 145کلومیٹر)فی گھنٹہ کی رفتار سے آندھی آئی جس نے اس پل کو کرچی کر چی کر دیا۔ یہ پل چینی شہر لانگ جیانگ میں 330فٹ کی بلندی پر بنایا گیا تھا۔ جہاں شیشہ ٹوٹ جانے کے بعد سیاح اطراف میں لگے ڈنڈوں اور رسوں کو پکڑ لٹک گیا اور پھر ریسکیوورکرز نے آ کر اس کی جان بچائی۔اب اس ٹوٹے ہوئے پل اور ایک طرف کے جنگلے سے لٹکے سیاح کی تصویر انٹرنیٹ پر تیزی سے وائرل ہو رہی ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.