The long awaited news came about Lyari gang warlord Aziz Baloch

لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کو اہم مقدمہ میں گواہوں نے شناخت کرلیا ہے۔

عزیر بلوچ ا س سے قبل 14 مقدمات میں عدم ثبوت اور گواہوں کے شناخت نہ کرنے پر بری ہوچکے ہیں۔یہ پہلا مقدمہ میں جس میں انکو گواہوں کی جانب سے شناخت کیا گیا ہے۔کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت میں جمعرات کو پولیس پر لیاری میں حملے اورغیر قانونی اسلحے سے متعلق کیسز کی سماعت ہوئی۔ملزم عزیر بلوچ اور نو پولیس اہلکار کو بطور گواہ عدالت میں پیش کیا گیا۔گواہان نے کٹہرے میں کھڑے عزیر بلوچ کو گواہی میں شناخت کرلیا۔ گواہان نےعدالت کو بتایا کہ ملزم کی ایما پر لیاری آپریشن کے دوران پولیس افسران اور اہلکاروں پر حملے کئے گئے۔

عدالت نے کیس کی سماعت 9جون تک ملتوی کردی اور آئندہ سماعت پر مزید گواہان کو پیش کرنے کی ہدایت کی۔دو ماہ قبل عزیربلوچ کے مسلسل بری ہونے سے متعلق عدالت میں پراسیکیوٹر نے انکشافات کيا تھا کہ عزیر بلوچ کے کیسز سے متعلق گواہان و پراسیکیوشن کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.