جے یو آئی کی مرکزی قیادت کو پارٹی کے سنیئر رہنماوں کی رکنیت ختم کرنا مہنگا پڑ گیا، مولانا شجاع الملک نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی )جے یو آئی ف سے منحرف رہنما مولانا شجاع الملک نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کیخلاف تحریک عدم اعتماد پاکستان ڈیمو کریٹ موومنٹ نے بھاگنے کیلئے بہانہ ڈھونڈ لیا ہے۔تفصیلات کے مطابق جمعیت علماء اسلام کی مرکزی قیادت کوپارٹی کے سنیئر رہنماوں کے پارٹی رکنیت ختم کرنا مہنگا پڑ گیا۔نجی ٹی وی پروگرام میں جمعیت علماء اسلام پاکستان کے ناراض سنیئر رہنماوں نے ژوب میں پارٹی کے کارکنوں اور رہنماوں سے رابطہ مہم کا آغاز کر دیا۔ مولانا محمد خان شیرانی نے ژوب شیرانی کے لئے رابطہ مرکز کا افتتاح کر دیا۔

تقریب میں جے یو آئی کے سنیئر رہنماوں ، کارکنان سمیت خیبر پختونخوا سے تعلق رکھنے والے شجاع الملک نے بھی شرکت کی ۔ قبل ازیں سابق ممبر قومی اسمبلی مولانا شجاع الملک نے کہا ہے کہ نیب قومی ادارہ ہے، مولانا کو نوٹس دیا تو دھرنا دینے کی ضرورت نہیں ، صاف ہیں تو اثاثے پیش کردیں، اگر کچھ نہیں تو بات ختم ہوجائے گی۔اپنے ایک بیان میں مولانا شجاع الملک نے کہا کہ چیئرمین نیب سمیت کسی کے سامنے دھرنے کی ضرورت نہیں، نیب ملک میںکسی کو بھی نوٹس جاری کرسکتا ہے، ہم سیاسی لوگ ہیں ہمیں چھپنا نہیں چاہیے۔انہوں نے کہا کہ جے یو آئی ف میں شہنشاہیت اور موروثیت کا رجحان پیدا کیا جا رہا ہے، ہماری رکنیت سے متعلق فیصلہ عجلت میں کیا گیا، کمیٹی بن گئی تو توقع تھی ہم سے مسئلے کے بارے میں پوچھا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ مسئلہ پارٹی کے اندر اصلاح کا تھا۔

تبصرے
Loading...