ملکی تاریخ میں پہلی بار اسٹیٹ بینک کی بہت بڑی رقم چوری، واردات کا ڈراپ سین

بہاولپور : سمہ سٹہ ریلوے پولیس نے سازو سامان لے جانی والی ٹرین سے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے 50 لاکھ روپے کے کرنسی نوٹ چوری ہونے کے بعد پولیس نے ملزمان کو ڈرامائی انداز میں گرفتار کرلیا۔

ذرائع کے مطابق بینک کے اربوں روپے کی منتقلی کے دوران ہونے والی چوری کی واردات میں امانت دار ہی چور نکلے، واردات میں ٹرین ملازم سمیت اس کے دو بیٹے اور داماد ملوث ہیں۔

10فروری کو اسٹیٹ بینک کے 17 ارب روپے کی کھیپ اور پرائز بانڈز پر مشتمل نقدی کراچی سے فیصل آباد منتقل کی جارہی تھی کہ رات کے وقت سمہ سٹہ ریلوے اسٹیشن پر 50 لاکھ روپے چوری کرلیے گئے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں بیورو چیف ملتان یاسر شیخ نے واردات کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ یہ واقعہ نہ صرف پاکستان بلکہ اسٹیٹ بینک اور ریلوے کی تاریخ میں پہلی بار پیش آیا۔

نمانئدے کے مطابق ملزم صاد ق سیال نے اپنے دو بیٹوں اور داماد کے ساتھ مل کر ورادات کی، تحقیقاتی ٹیم نے واردات میں 8سے زائد افراد کے کے شامل ہونے کا انکشاف کیا ہے۔

دوسری جانب پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ملزم ساجد سیال کے گھر سے 30 لاکھ روپے برآمد کیے گئے جبکہ ملزم کی نشاندہی پر اس کے بہنوئی محمد زبیر کے گھر سے 29لاکھ 34ہزار400 روپے برآمد کرلیے گئے ہیں۔

یاد رہے کہ چوری کی اصل رقم 50 لاکھ تھی لیکن پاکستانی پولیس نے 5934400 روپے برآمد کیے ہیں

تبصرے
Loading...