- Advertisement -

حکومت کا بجلی 11 روپے فی یونٹ مہنگی کرنے کے لئے نیپرا کو ہدایت جاری

- Advertisement -

حکومت نے نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی سے کہا ہے کہ وہ کم کھپت والے صارفین کا بوجھ برداشت کرنے کے لیے ملک بھر میں ماہانہ 700 یونٹس سے زائد بجلی استعمال کرنے والے گھریلو صارفین کے لیے بجلی کے نرخوں میں 11 روپے فی یونٹ تک اضافے کی اجازت دے۔
میڈیا رپورٹ کے مطابق 101 سے 200 یونٹس اور اس سے زائد کی ماہانہ کھپت کی سلیب والے صارفین کے لیے ‘ٹیرف ری بیسنگ 23-2022’ کے تحت وفاقی حکومت کی جانب سے منظور شدہ یہ نرخ چند ہفتے قبل نیپرا کی جانب سے مقرر کردہ یکساں قومی اوسط میں 7.91 روپے فی یونٹ اضافے سے نمایاں طور پر زیادہ ہیں۔
پاور ڈویژن کی جانب سے نیپرا کو لکھی گئی درخواست کے مطابق مختلف صارفین کے سلیب کے درمیان بڑے پیمانے پر کراس سبسڈی کے علاوہ حکومت اب بھی 234 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کرے گی جس میں سابق واپڈا کی تقسیم کار کمپنیوں کے لیے 220 ارب روپے اور کے-الیکٹرک (کے-ای) کے لیے 14 ارب روپے ہوں گے۔