حکومت نے بیرون ملک سے موبائل فون لانے والوں کے لیے نیا سسٹم لاگو کردیا،نوٹیفیکشن جاری

اسلام آباد ۔ (ویب ڈیسک) حکومت پاکستان نے بیرون ملک سے موبائل فون لانے والوں کیلئے نیا سسٹم لاگو کردیا، پی ٹی اے، ایف بی آر اور ٹیلی کام آپریٹرز نے نئے نظام پر اتفاق کرلیا۔ ایف بی آر نے نئے نظام کا نوٹیفیکشن بھی جاری کردیا۔ اوورسیز پاکستانیز ایک سال میں پانچ موبائل فون پاکستان لاسکے گا، بیرون ملک سے پاکستان آنیوالا شہری آن لائن پورٹل کے ذریعے ٹیکسز اور ڈیوٹی جمع کرواسکتا ہے۔

بیرون ملک سے آنیوالا شہری موبائل کی رجسٹریشن اور ٹیکس و ڈیوٹی بذریعہ فرنچائز بھی جمع کروا سکتا ہے، شہری نئے موبائل کی رجسڑیشن کیلئے این آئی سی، پاسپورٹ نمبر، آئی ایم ای آئی نمبر بذریعہ WeBOC درج کروائے۔ موبائل ڈیوائس تمام ٹیکسز، ڈیوٹیز کی ادائیگی کے بعد کلیئر کردی جائیگی۔
اوورسیز پاکستانی بیرون ملک سے پہلا موبائل فون فری بغیر ڈیوٹی اور ٹیکسز لاسکتے اور رجسڑڈ کرواسکتے ہیں۔

دوسرے اور باقی موبائل فون کیلئے سسٹم الیکڑانک سلپ دیگا جو کسی بھی آن لائن بینک برانچ یا موبائل بینکنگ یا اے ٹی ایم کے ذریعے ادا کی جا سکتی ہے۔ ٹیکس اور ڈیوٹی کی ادائیگی کے بعد موبائل ڈیوائس وائٹ لسٹ میں شامل ہوجائیگی۔ باہر سے آنیوالے پاکستانی 60 یوم کے اندر اندر اپنی موبائل ڈیوائسز وائٹ کروا سکتے ہیں۔ 60 یوم کے بعد انہیں بھی اضافی جرمانہ ادا کرکے اپنی موبائل ڈیوائس کو وائٹ کروانا ہوگا۔

مقامی افراد پی ٹی اے ویب بیسڈ سہولت کو استعمال کرتے ہوئے ڈی آئی آر بی ایس پر اپنی ڈیوائس وائٹ کروا سکتے ہیں۔ مقامی افراد کی انفارمیشن داخل ہونے کے بعد الیکڑانک رسید جاری ہوگی جو وہ جمع کروائیں گے۔ قابل ادا ڈیوٹی و ٹیکسز کو ادا کرکے مقامی افراد بھی اپنی ڈیوائسز کو وائٹ کر سکتے ہیں۔ کوریئر اور ویب کے ذریعے سے صرف سی او سی کے حامل درآمدی موبائل رجسڑڈ ہو سکتے ہیںٰ۔

بہت سی کمپنیوں کو پی ٹی اے کی طرف سے سی او سی پہلے سے ہی جاری کیا جاچکا ہے۔ مقامی موبائل کمپنیوں و تاجروں کیلئے بھی ایف بی آر نے رجسڑیشن کا نیا طریقہ کار وضع کردیا۔ ان رجسڑڈ موبائل ہولڈر نزدیکی کسٹمر کلیکٹر کے پاس حلفیہ بیان اور آئی ایم ای آئی کی سافٹ کاپی جمع کروائے۔ حلفیہ بیان جمع کروانے پر متعلقہ کسٹم کلیکٹر ان موبائل ڈیوائسزکو رجسڑڈ کروانے کی تصدیق کریگا۔

کسٹم کلیکٹر کی تصدیق کے بعد سی او سی کی کاپی فراہم کریگا۔ سی او سی جاری کرنے ہونے کے بعد موبائل تاجرکسٹم اتھارٹی سے رابطہ کرکے موبائل فون حاصل کریگا۔ موبائل تاجر اپنے تمام موبائل فون ڈیوائسز کے ٹیکسز و ڈیوٹی نیشنل بینک میں جمع کرواسکتے ہیں۔ ڈپلیکیٹ اور غیر تصدیق شدہ آئی ایم ای آئی نمبر کے حامل موبائل فونز کو ڈربز مستقل طور پر بلاک کررہا ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں