- Advertisement -

چترال میں موسلادھار بارش اور سیلابی ریلوں نے تباہی مچا دی

- Advertisement -

خیبرپختونخوا میں موسلادھار بارش اور سیلابی ریلوں نے تباہی مچا دی۔ 14 مکانات اور 3 دیگر عمارتیں مکمل طور پر تباہ جبکہ 23 ​​مکانات اور 8 دیگر عمارتوں کو جزوی نقصان پہنچا۔
بالائی چترال میں بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی آگئی۔ سیلابی ریلے میں کئی مکانات بہہ گئے اور کئی کو نقصان پہنچا۔
پی ڈی ایم اے نے کہا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران بارشوں کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق اور دو افراد زخمی ہوئے۔
مجموعی طور پر 45 املاک کو نقصان پہنچا جن میں سے 14 مکانات اور 3 دیگر عمارتیں مکمل طور پر تباہ جبکہ 23 ​​مکانات اور 8 دیگر عمارتوں کو جزوی نقصان پہنچا۔ کئی مقامات پر مواصلاتی پل بھی بہہ گئے۔ سب سے زیادہ نقصان اپر چترال میں ہوا۔
چترال کے مختلف علاقوں میں برساتی نالوں میں طغیانی کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر ہے۔ چترال اور دیگر اضلاع میں سڑکوں پر کلیئرنس آپریشن جاری ہے۔
پی ڈی ایم اے نے صوبے کی تمام ضلعی انتظامیہ اور متعلقہ اداروں کو ہائی الرٹ رہنے کی ہدایت کی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق آج اتوار اور کل پیر کو تیز بارش کا امکان ہے جس کے باعث ملک کے بیشتر نشیبی علاقوں اور ندی نالوں میں طغیانی کا خدشہ ہے۔