- Advertisement -

تین رکنی بینچ کا بائیکاٹ کرنا عدلیہ پر حملہ ہے: شاہ محمود قریشی

- Advertisement -

سابق وزیر خارجہ اور رہنما پی ٹی آئی شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ آج ایگزیکٹیو نے عدلیہ پر حملہ کیا ہے، جج صاحبان کو خراج تحسین پیش کرنا چاہوں گا جنہوں نے خندہ پیشانی اور حوصلے سے ان کی بدتمیزی برداشت کیا۔
شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ عوام سے کہتا ہوں ان سے بائیکاٹ کرلے، پوری قوم ان کے کھوکھلا پن کو مسترد کرے گی، ضمنی انتخابات میں پنجاب کے لوگوں نے ان کو مسترد کیا ہے اب جنرل الیکشن میں بھی قوم ان کو مسترد کرے گی۔
آپ کہتے ہیں ان ججز پر ہمیں اعتماد نہیں، انہی ججز کے فیصلے پر آپ نے مٹھائیاں تقسیم کی تھیں، آئین کے متعلق اگر ججز فیصلہ دیتے ہیں تو آپ سیخ پا ہوجاتے ہیں، آج پی ڈی ایم نے آئین پر حملہ کیا ہے، پی ڈی ایم نے آج آئین شکنی کی ہے، آج ایگزیکٹو نے عدلیہ پر حملہ کیا ہے۔
انہوں نے کئی سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ عدلیہ کو سلام پیش کرتا ہوں آج ان کی بد تمیزی برداشت کی، وزیر قانون نے کس حیثیت میں دلائل دینا شروع کیے جب ان کا وکیل موجود تھا، اتنے اہم موڑ پر آپکے اٹارنی جنرل ملک سے باہر تھے، اتنا اہم کیس تھا اور کھیل کے آرکیٹکٹ زرداری ملک سے باہر تھے، کیا قوم اب نہیں سمجھتی یہ سب ؟ کیا آپ نے دلائل نہیں دیے ؟ اگر اپ کو بینچ پر اعتراض تھا تو آپ نے لکھ کر جواب کیوں دیا؟
دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما علی زیدی نے کہا ہے کہ مہذب دنیا میں شاید پہلی مرتبہ ہوا سپریم کورٹ کا بائیکاٹ کردیا گیا ہے، حکومت نے بغاوت کی ہے، پوری قوم عدالت کے ساتھ کھڑی ہے، عدلیہ سے درخواست ہے ان کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے۔