- Advertisement -

بجلی کی قیمت میں ساڑھے 3 روپے فی یونٹ اضافہ

- Advertisement -

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر توانائی خرم دستگیر نے کہا کہ کابینہ نے بجلی کی قیمت میں اضافے کی منظوری دے دی ہے، اس اضافے کا بڑا حصہ فیول سرچارج بن کر آرہا ہے، بجلی کی قیمت میں 26 جولائی سے ساڑھے 3 روپے کا اضافہ کیا گیا ہے۔
خرم دستگیر کا کہنا تھا کہ تین ماہ مشکل ہیں، نومبر کے بعد کمی آجائے گا، ہمیں ایندھن کی قیمت میں اضافے کا سامنا ہے، ایک تہائی صارفین پر بجلی کی قیمت میں اضافے کا اثر نہیں پڑے گا۔
خرم دستگیر نے کہا کہ تحریک انصاف کے دور میں بعض وزراء کے مہنگے پاور پلانٹس کو چلایا گیا، اس حوالے سے ایک وائٹ پیپر جلد عوام کے سامنے لائیں گے۔
وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ جو قانون بننے جا رہا ہے اس سے حکومتوں کے درمیان ٹرانزیکشنز ميں شفافیت ہوگی، قانون اس لئے لا رہے ہيں ہے کہ بہت سے ممالک سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں، قانون سے اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ ٹرانزیکشنز میں تیزی ہوگی۔
انہوں نے مزید کہا کہ عالمی مالیاتی اداروں سے معاملات حل ہونے جارہے ہیں۔
اس موقع پر وزیر پیٹرولیم مصدق ملک کا کہنا تھا کہ جو کچھ ہوچکا ہمارا اختیار میں نہیں، تین چاربرس کی قیمت ہمیں دینی پڑ رہی ہے۔