- Advertisement -

برآمدی اور صنعتی شعبے کے لیے گیس مزید مہنگی

- Advertisement -

حکومت نے برآمدی اور صنعتی شعبہ جات کے لیے گیس مزید مہنگی کردی ہے۔
میڈیا رپورٹ کے مطابق برآمدی شعبے کیلئے گیس کا ریٹ 530 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو اور صنعتی شعبے کیلئے گیس کا ریٹ 700 میٹرک ملین برٹش تھرمل یونٹ بڑھا دیا گیا۔
برآمدی وصنعتی شعبہ جات کے لیے گیس کے ریٹ 60 سے 80 فیصد مہنگے ہوگئے، برآمدی شعبے کی گیس 820 سے بڑھا کر 1350 روپے اور صنعتی شعبےکی گیس850سےبڑھ کر1550روپےفی ایم ایم بی ٹی یوکردی گئی ہے۔
ترجمان وزارت خزانہ کے ترجمان رانااحسن نے کہا ہے کہ گیس اوربجلی کےریٹ بڑھانامجبوری تھی، حکومت برآمدی اورصنعتی شعبے کو اب بھی رعایتی گیس دے رہی ہے۔
رانااحسن افضل کا کہنا تھا کہ برآمدی شعبےکی گیس کیلئے بجٹ میں 40 ارب روپےکی سبسڈی رکھی ہے، سبسڈی کا مقصد ہے کہ برآمدی شعبہ بین الاقوامی مارکیٹ کامقابلہ کرسکے۔
گذشتہ روز وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کی زیرصدارت ای سی سی کے اجلاس میں 5برآمدی شعبوں کیلئےآرایل این جی گیس ریٹ کی منظوری دی گئی تھی۔
برآمدی سیکٹرزکو9 ڈالرفی ایم ایم بی ٹی یوگیس فراہم کی جائے گی جبکہ 5برآمدی شعبوں کو بجلی بھی 9 سینٹ فی یونٹ فراہمی کا فیصلہ کیا گیا تھا،نئے ریٹس کا اطلاق یکم اگست 2022 سے ہوگا۔