- Advertisement -

پنجاب میں گورنر راج نہیں لگا رہے، عدلیہ کے اختیارات جو آئین میں ہیں وہی رہیں گے: وزیر قانون

- Advertisement -

وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے کہا ہے کہ عدلیہ کی طرف سے پارلیمان کے معاملات میں مسلسل مداخلت کی جا رہی ہے، پارلیمان اپنی آئینی حدود کا تحفظ کرنا جانتی ہے اور کرے گی۔
پاکستان مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے واضح طور پر کہا کہ پنجاب میں گورنر راج نہیں لگا رہے ہیں اورعدلیہ کے اختیارات جو آئین میں ہیں وہی رہیں گے۔
وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ پنجاب میں وفاقی وزرا کے داخلے روکیں گے تو گورنر راج کا جواز پیدا کریں گے۔
واضح رہے کہ پی ایم ایل (ن) سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرے پنجاب میں داخلے پر پابندی کی باتیں کی جا رہی ہیں، ایسا کریں، وزارت داخلہ نے بھی پنجاب میں گورنر راج کی سمری پر کام شروع کر دیا ہے، پنجاب میں میرے داخلے پر پابندی گورنر راج کا جواز ہو گا۔
وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے کہا کہ عدم اعتماد تحریک کی کامیابی کے بعد (ن) لیگ کا فیصلہ الیکشن میں جانا تھا لیکن ملک کو ڈیفالٹ سے بچانے کے لیے شہباز شریف نے قیادت سنبھالی۔