آئی ایم ایف سے قرض کے حصول کے بعد ڈالر 150 روپے تک پہنچ جانے کی افواہیں زیرگردش

لاہور(ویب ڈیسک) آئی ایم ایف سے قرض کے حصول کے بعد ڈالر 150 روپے تک پہنچ جانے کی افواہیں زیرگردش، آئی ایم ایف سے مالیاتی پیکج ملنے کے بعد مہنگائی کی شرح میں بھی اضافہ ہونے کے خدشات کا اظہار، تاہم وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داود کی جانب سے ایسی خبروں کی تردید۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کی مارکیٹ میں خبریں گردش کر رہی ہیں کہ اگر پاکستان آئی ایم ایف سے قرضہ حاصل کرتا ہے تو اسے سخط شرائط بھی قبول کرنا ہوں گی۔

آئی ایم ایف کی ممکنہ شرائط میں روپے کی قیمت کو ڈالر کے مقابلے میں 150 روپے یا اس سے زائد تک لے جانے کی شرط بھی شامل ہے۔ جبکہ آئی ایم ایف سے مالیاتی پیکج ملنے کے بعد مہنگائی کی شرح میں بھی اضافہ ہونے کے خدشات کا اظہار بھی کیا جا رہا ہے۔

تاہم اس حوالے سے وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داود کی جانب سے تردید کی گئی ہے۔ شیر تجارت عبدالرزاق داؤد نے کہا ہے کہ روپے کی قدر میں کمی کا کوئی ارادہ نہیں، آئی ایم ایف سے مذاکرات میں بجلی اور گیس کی قیمت بڑھانے پر بات چیت کی خبریں بے بنیاد ہیں۔

معاشی نظم و ضبط قائم کرنے کے لیے سخت فیصلے کیے، مضبوط معیشت کا فائدہ عوام کو ہی پہنچے گا، اگرچہ برآمدات توقع سے کم ہے تاہم تجارتی خسارے میں کمی پالیسیوں کی مثبت پیش رفت کا نتیجہ ہے۔ برآمدت میں 4 فیصد اضافہ جبکہ درآمدت میں 5 فیصد کمی ہوئی ہے۔ رتعیش اشیاء پر ریگولیٹری ڈیوٹی لگانے کے مثبت اثرات سامنے آئے ہیں۔ دوسری جانب ایسی خبروں کے باعث انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں 53 پیسے تک کا اضافہ ہوا ہے۔ انٹر بینک میں ڈالر 138 روپے 93 پیسے پر بند ہوا جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر 20 پیسے بڑھ گیا اوپن مارکیٹ میں ڈالر139 روپے 20 پیسے میں فروخت ہوا۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں