دانتوں میں کیڑے اور مردانہ کمزوری میں انتہائی گہرا تعلق پہلی مرتبہ سامنے آگیا

میڈرڈ(نیوز ڈیسک) دانتوں کی صفائی باقاعدگی سے کیجئے کیونکہ جب آپ دانت صاف کر رہے ہوتے ہیں تو صرف مسوڑھوں اور دانتوں کی ہی نہیں بلکہ اپنی مردانہ طاقت کی بھی حفاظت کر رہے ہوتے ہیں۔ یہ کہنا ہے ہسپانوی سائنسدانوں کا، جن کی حالیہ تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ مسوڑھوں کے امراض سے دوچار افراد میں مردانہ کمزوری کا خدشہ تقریباً دوگنا سے بھی زیادہ ہوتا ہے۔

تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ مسوڑھوں کی بیماری اور مردانہ کمزوری میں سے ایک بیماری موجود ہو تو یہ اس بات کی علامت ہے کہ دوسری بھی موجود ہو گی۔ یعنی اگر آپ کو مسوڑھوں کی بیماری لاحق ہے تو اس کا مطلب ہے کہ مردانہ کمزوری بھی ہے، یا کم از کم اس کا خدشہ ضرور موجود ہے۔

میل آن لائن کے مطابق یہ تحقیق سپین کی گرینیڈا یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے کی ہے جس میں معلوم ہو اہے کہ مردانہ کمزوری اور مسوڑھوں کی بیماری دونوں کا تعلق جگر میں پیدا ہونے والی ایک پروٹین سے ہے۔ اسی طرح مسوڑھوں کی بیماری کا تعلق دل کی بیماری سے بھی ہے۔ اس تحقیق کے نتیجے میں سائنسدانوں نے مزید بتایا ہے کہ مردانہ کمزوری پر جتنا ذیابیطس یا دل کی بیماری اثر انداز ہوتی ہے مسوڑھوں کی بیماری اس سے بھی زیادہ اثر انداز ہوتی ہے۔

اس تحقیق کے دوران 23 سے 69 سال عمر کے 158 افراد میں مسوڑھوں کی بیماری اور مردانہ کمزوری کے متعلق شواہد جمع کئے گئے تھے۔ جن افراد کو مردانہ کمزوری کا مسئلہ لاحق تھا ان میں سے 80 افراد کو مسوڑھوں کی بیماری بھی لاحق تھی۔ مسوڑھوں کی بیماری سے متاثرہ افراد میں مردانہ کمزوری کا خدشہ دیگر افراد کی نسبت تقریباً 2.17 گنا زیادہ پایا گیا۔ یہ تحقیق سائنسی جریدے جرنل آف پیریو ڈونٹولوجی (Journal of Periodontology) میں شائع کی گئی ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں