وزیر اعظم نے نئے وزیر خزانہ کا انتخاب کر لیا، نام کا اعلان کردیا گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ٹیکنوکریٹ حفیظ شیخ کو وزیر خزانہ بنانے کا فیصلہ، وزیراعظم نے منظوری دے دی، حفیظ شیخ پیپلز پارٹی دور میں بھی وزیر خزانہ رہ چکے، باقاعدہ اعلان کل تک کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق وزراعظم عمران خان نے نئے وزیر خزانہ کے نام کی منظوری دے دی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے پیپلز پارٹی کے دور میں وزیر خزانہ رہنے والے حفیظ شیخ کو وفاقی وزیر برائے خزانہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

عمران خان نے حفیظ شیخ کو وزیر خزانہ بنانے کی منظوری دے دی ہے۔ حفیظ شیخ کو وزیر خزانہ کا عہدہ دینے کا باقاعدہ اعلان ایک روز تک کیا جائے گا۔ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے وزارت چھوڑنے کے اعلان کے بعد اسد عمر کو اپنے آفس میں طلب کیا۔بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں وزارتوں میں تبدیلی سے متعلق اسدعمر سے مشاورت کی۔

وزیراعظم عمران خان نے اسدعمر سے مل کروزارت خزانہ کیلئے ممکنہ ناموں پر غور کیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی ملاقات میں نعیم الحق ، جہانگیرترین ،اسد عمر سمیت دیگر اہم رہنماء بھی شامل تھے۔ اب وزیراعظم عمران خان نے مشاورت کے بعد حفیظ شیخ کو نیا وزیر خزانہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے جس کا اعلان کل تک کر دیا جائے گا۔ دوسری جانب معلوم ہوا ہے کہ وفاقی کابینہ میں تبدیلیوں کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے، ابتدائی طور پر پانچ وزارتوں میں رودبدل کیا جائے گا۔
بتایا گیا ہے کہ اسد عمر کے بعد اب صاحبزادہ محبوب سلطان، شہریار آفریدی اور فیصل واوڈا کی وزارتیں بھی خطرے میں ہیں۔وفاقی وزراء اعجاز شاہ، غلام سرورخان اور عمر ایوب کی وزارتیں بھی تبدیل کردی جائیں گی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اسد عمر کے توانائی وزارت لینے کے انکار کے بعد عمر ایوب نے بھی وزارت پٹرولیم لینے سے انکار کردیا ہے۔وزیراعظم عمران خان چوہدری غلام سرور کو بھی وزارت پٹرولیم کا قلمدان چھوڑنے کا کہہ چکے ہیں۔

اسی طرح وفاقی وزیرپارلیمانی اموراعجاز شاہ کو وزارت داخلہ بنائے جانے کا امکا ن ہے۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب کو ملاقات کیلئے طلب کرلیا ہے۔ ملاقات میں وزارت خزانہ اور سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اسی طرح حکومت کی جانب سے نئے وزیرخزانہ کیلئے ڈاکٹرعشرت حسین، حفیظ پاشا، سلمان شاہ، شوکت ترین سمیت عمر ایوب کے نام زیرغور ہیں۔

واضح رہے اسد عمر نے وزارت خزانہ چھوڑنے کا اعلان کردیا ہے۔ انہوں کہا کہ وفاقی کابینہ میں مزید تبدیلیوں کا اعلان رات یا صبح ہوجائے گا، پاکستان کی بہتری کیلئے حصہ ڈالنے کیلئے آیا تھا،عمران خان کو کہا کہ آپ کیلئے نہیں پاکستان کیلئے پی ٹی آئی جوائن کی ہے، سازشوں میں نہیں پڑتا، نہیں معلوم میرے فیصلے سے پی ٹی آئی مضبوط ہوگی یا کمزور ہوگی۔ انہوں نے وزارت خزانہ چھوڑنے کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے پہلے بھی کہا تھا کہ کارکردگی کی بنیاد پر ردوبدل کرنا چاہتے ہیں ، وہ چاہتے ہیں کہ میں توانائی کا چارج لے لوں۔ لیکن میں نے ان کو کہا کہ آپ اجازت دیں کہ میں کابینہ سے الگ ہوجاتا ہوں۔عمران خان سے کہا کہ میں نئے پاکستان کیلئے ہمیشہ دستیاب ہوں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں