حُکومت کی جانب سے تعینات کیے گئے نئے چیئرمین ایف بی آرشبر زیدی سے متعلق جھوٹی خبریں چلانے پر نجی چینل نے معافی مانگ لی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) چینل 24 نیوز نے جھوٹی خبر نشر کرنے پر معافی مانگ لی۔ 24 نیوز چینل نے خبر چلائی تھی کہ دوسروں سے ٹیکس لینے کے لیے لگائے گئے شبر زیدی خود ٹیکس نہیں دیتے، شبر زیدی نان فائلر ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے چیئرمین ایف بی آر اور گورنر اسٹیٹ بینک کو اچانک عہدوں سے برطرف کرنے کے بعد نئے تعینات ہونے والے عہدیدار میڈیا کی خبروں کی زینت بنے رہے۔

حکومت کی طرف سے تعینات نئے گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقراس لیے تنقید کی زد میں رہے کہ وہ آئی ایم ایف کے ملازم رہ چکے ہیں اور مصر میں ادارے کی جانب سے خدمات سر انجام دے رہے تھے جبکہ اعزازی طور پر 2 سال کے لیے چیئرمین ایف بی آر تعینات ہونے والے شبر زیدی بھی مخلتف حوالوں سے خبروں کی زینت بنے رہے اور ناقدین کی زد میں رہے۔

اسی بیچ معروف میڈیا چینل 24 نیوز نے شبر زیدی سے متعلق ایک خبر چلائی جس میں کہا گیا کہ شبر زیدی نان فائلر ہیں اور وہ اپنے ٹیکس ادا نہیں کرتے۔
خبر میں کہا گیا کہ دوسروں سے ٹیکس اکٹھا کرنے کے لیے لگائے گئے شبر زیدی خود ٹیکس ادا نہیں کرتے۔ مزید تفصیلات کے مطابق نجی چینل کی جانب سے غیر مصدقہ خبر چلانے پر معروف صحافی منصور علی خان نے چینل کی جانب سے چلائی گئی خبر کے اسکرین شارٹ لے کر ٹوئیٹ کیا

اور تشویش کا اظہار کیا تا ہم چینل کی جانب سے با ضابطہ معافی مانگ لینے کے بعد اینکر منصور علی خان نے اپنا ٹوئیٹ ڈیلیٹ کر دیا۔
اینکر منصور علی خان کی جانب سے ٹوئیٹ ڈیلیٹ کرنے کے بعد نوجوان صحافی صدیق جان کا کہنا ہے کہ ان کو صرف ٹوئیٹ ہی نہیں ڈیلیٹ کرنا چاہیے بلکہ غیر مصدقہ خبر شیئر کرنے پر معافی بھی مانگنی چاہیے۔ واضح رہے کہ حکومت نے شبر زیدی کو اعزازی طور پر دو سال کے لیے چیئرمین ایف بی آر تعینات کر دیا ہے، ان کی تعیناتی کا نوٹیفیکیشن بھی جاری ہو چکا ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں