آئل ٹینکرز کے بعد سعودی آئل پمپنگ سٹیشنوں پر ڈرون سے حملے

آئل ٹینکرز کے بعد سعودی عرب کے آئل پمپنگ سٹیشنوں پر ڈرون سے حملے ہوگئے سعودی وزیر تیل نے دعویٰ کیا ہےکہ دھماکہ خیزمواد سے لیس ڈرونز نےمشرقی علاقے سے مغربی علاقوں کو جانے والی پائپ لائنوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ایک سٹیشن میں آگ بھڑک اٹھی۔

سعودی وزیرِ تیل خالد بن عبدالعزیز الفلیح نے دعویٰ کیا ہے کہ واقعہ منگل کو صبح چھ سے آٹھ بجے کے درمیان پیش آیا،دھماکہ خیز مواد سے لیس ڈرونز نےمشرقی علاقے سے مغربی علاقوں کو جانے والی پائپ لائنوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں سٹیشن نمبر آٹھ میں آگ بھڑک اٹھی۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق واقعے کے بعد سعودی کمپنی آرامکو نے پائپ لائن میں تیل کی فراہمی بند کر دی ہے اورنقصانات کا جائزہ لیا جا رہا ہے تاہم وزیرِ تیل کا کہنا ہے کہ تیل کی پیداوار اور برآمد کا عمل متاثر نہیں ہوا ہے۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق سعودی وزیر نے حملے کوبزدلانہ قرار دیتے ہوئےیمن میں سعودی عرب اور اتحادیوں کے خلاف سرگرم حوثی ملیشیا ذمہ دار قراردیا ہے۔

 

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں