ملک میں معاشی بارودی سرنگیں بچھانے کا انکشاف 56کمپنیوں کی تشکیل نے اہم رازوں سے پردہ اٹھا دیا اہم اداروں نے سراغ لگا لیا ،ذمہ داروں کے خلاف تحقیقات کا شروع

لاہور(رپورٹ:اسد مرزا)مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں ملک کو معاشی طور پرتباہ کرنے کےلئے ایسی پالیسیاں تیار کی گئیںجنکا مقصد لیگی رہنماﺅں اور انکے چہیتوں کو نوازنا جبکہ ملک کو معاشی طور پر تباہ کرنا مقصود تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ن لیگ کے سابق دور حکومت میں 56 کمپنیاں بنائی گئیںان کمپنیوں کی تشکیل کے لئے اربوںڈالر کا قرضہ لیا گیا لیکن کمپنیوں نے عوامی بہبود کے لئے کوئی کرداد ادا نہیں کیا ۔ان کمپنیوں میں من پسند افراد کو بھاری معاوضہ پر پرکشش سیٹوں پر فائز کیا گیا جس سے کمپنیاں ملکی معشیت کے لئے سفید ہاتھی بن گئیں۔ بتایا گیاہے کہ سابقہ حکمرانوں نے ملک کو معاشی ترقی کی راہ میں ڈالنے یا عوامی فلاح و بہبود کا منصوبہ بنانے کی بجائے ایسی حکمت عملی تیار کی جس سے تمام پیسہ انکی جیبوں میں جائے ،56کمپنیوں کا قیام اسی سلسلہ کی کڑی ہے حلانکہ سرکاری محکمے پاکستان میں موجود ہیں جن کے زریعے مختلف پراجیکٹ پایہ تکمیل تک پہنچائے جا سکتے ہیں لیکن ن لیگی حکمرانوں نے سرکاری محکموں کے زریعے منصوبوں کو مکمل کرنے کی بجائے اپنے چہیتوں کو نوازنے کے لئے 56کمپنیاں بنا دیں ۔

صاف پانی سکینڈل کے متعلقہ کمپنی بھی اسی سلسلہ کی ایک کڑی ہے۔اس پالیسیوں کا مقصد آئندہ آنے والی حکومتوں کے لئے معاشی بارودی سرنگیں بچھانا تھا، تا کہ کوئی حکومت بہتر معاشی پالیسیوں کے زریعے اس ساری تباہی کو ختم کر کے نئی تعمیر نہ کر سکے اور عوام کے ذہنوں پر سابق حکمران ہی سوار ہوں اور ہر طرف یہی آواز بلند کی جائے کہ ن لیگ کی پالیسیوں سے ملک بہتر انداز سے آگے جا رہاتھا ۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں