انگلینڈ میں تمام باوٴلر ناکام۔۔ ٹیم انتظامیہ کو محمد عامر کی اہمیت کا احساس ہوگیا۔

لاہور(ویب ڈیسک) پی سی بی کی سلیکشن کمیٹی فاسٹ باﺅلر محمد عامر کے حوالے سے ٹیم انتظامیہ کی حکمت عملی پرسخت خفا ہے۔قومی ٹیم تین ہفتوں سے انگلینڈ میں موجود ہے لیکن ابھی تک محمد عامر ایک بھی گیند نہیں پھینک سکے، اس ساری صورتحال نے سلیکٹرز کو پریشان کرنے کے ساتھ ورلڈکپ میں فاسٹ بولر کی شمولیت پر بھی سوالیہ نشان لگادیا ہے۔

انگلینڈ کے خلاف سیریز میں موجودہ باﺅلنگ اٹیک کی کارکردگی کو دیکھنے کے بعد اب محمد عامر کی شمولیت بہت ضروری سجھی جارہی ہے لیکن سلیکٹرز کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے محمد عامر کی فٹنس اور فارم کو ایک بار ضرور پرکھنا چاہتے ہیں ۔ذرائع کے مطابق ورلڈکپ کی حتمی ٹیم میں ممکنہ تبدیلی کا فیصلہ بھی ون ڈے سیریز ختم ہونے تک موخر کردیا گیاہے، سترہ رکنی ٹیم میں سے واپس آنےوالے دو کھلاڑیوں کا اعلان اب 21 یا 22 مئی کو کیاجائے گا۔

تین کاﺅنٹی میچوں کے ساتھ واحد ٹی ٹونٹی میں بھی بائیں ہاتھ کے پیسر کو چیف کوچ مکی آرتھر اور کپتان سرفراز احمد نے پلینگ الیون کا حصہ نہیں بنایا جو حیران کن ہے۔انگلینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز کے پہلے میچ میں محمد عامر کو میچ بارش کی نذر ہونےکی وجہ سے باﺅلنگ کا موقع نہیں مل سکا۔ دوسرے و ن ڈے سے قبل محمد عامر وائرل انفیکشن کا شکار ہو گئے، پھر چکن پاکس کی تشخیص ہونے پر وہ تیسرے میچ کےساتھ اب چوتھے میچ سے بھی باہر ہوچکے ہیں۔

دوسری جانب ٹیم کپتان سرفرازاحمد اور کوچ مکی آرتھر ون ڈے سیریز میں باﺅلرز کی پٹائی پر سخت پریشان ہیںاور اب وہ محمد عامر کو ورلڈکپ میں شامل کرنے کے خواہش مند ہیں،ٹیم انتظامیہ کو یقین ہے کہ عامر کے مرض کی نوعیت زیادہ سنجیدہ نہیں اور اور وہ آخری ون ڈے میچ کھیل سکتے ہیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں