فواد چوہدری کا سمیع ابراہیم کو تھپڑ مارنے کا معاملہ۔۔ویڈیو سامنے آ گئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) : وفاقی وزیر فواد چوہدری نے ایک شادی کی تقریب کے دوران صحافی سمیع ابراہیم کے منہ پر تھپڑ مارا تھا۔جس کے بعد فواد چوہدری پر صحافی برادری کی جانب سے شدید تنقید بھی کی گئی جب کہ اب اسی تقریب کی ایک ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں فواد چوہدری کو کافی غصے میں دیکھا جا سکتا ہے۔

خیال رہے نجی ٹی وی چینل کے رپورٹر نے فواد چوہدری سے سوال کیا کہ سمیع ابراہیم کے معاملے پر کیا کہیں گے؟ سوشل میڈیا پر مہم چل رہی ہے۔
جس پرفواد چوہدری نے کہا کہ یہ کوئی انوپم کھیر یا دلیپ کُمار والا تھپڑ تھوڑی ہے جس پر مہم چل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے میرے سامنے سمیع ابراہیم کو فون نہیں کیا۔ البتہ میں سمیع ابراہیم کو بھی معاف کردوں گا کوئی ایشو نہیں ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے بھی صحافی سمیع ابراہیم سے ٹیلی فونک گفتگو بھی کی تھی۔ گفتگو کے دوران وزیراعظم عمران خاننےفیصل آباد میں سمیع ابراہیم کے ساتھ پیش آئے واقعہ پر اظہارِ افسوس کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کی اجازت نہیں دیں گے۔پاکستان تحریک انصاف کی قیادت کسی ایسے انفرادی فعل کی حوصلہ افزائی نہیں کرتی جس میں دانستہ یا غیر دانستہ طور پر کسی کی عزت نفس مجروح ہو۔ حکومت اور میڈیا جمہوری عمل کے دو لازم و ملزوم جزو ہیں۔ نقطہ نظر کے اختلاف کو ذاتی اختلاف کی حد تک لے کر جانا کسی صورت مناسب نہیں۔

جب کہ معروف صحافی سعید قاضی نےفواد چوہدری کے سمیع ابراہیم کو تھپڑ مارے جانے کے واقعے پر اظہار افسوس کیا اور اس واقعے کی مذمت بھی کی۔سعید قاضی کا کہنا تھا کہ ہم وزیر اعظم عمران خان کے شکرگزار ہیں کہ انہوں نے سمیع ابراہیم سے ٹیلی فونک رابطہ کرکے اس واقعے پر اظہار افسوس کیا۔جس سے شاید سمیع ابراہیم کا غم کچھ کم ہوا ہو۔ تاہم فواد چوہدری کا یہ رویہ ناقابل برداشت ہے۔

فواد چوہدری نے نے سیاست کا غلط استعمال کیا اور انہوں نے جب تک سمیع ابراہیم سے معافی نہ مانگی ہم اس پروگرام میں روزانہ اس موضوع پر بات کریں گے۔انہوں نے کہا کہ فواد چوہدری نے باتوں باتوں میں سمیع ابراہیم سے معافی مانگی جو کہ نہ ہونے کے برابر ہے۔جب فواد چوہدری نے پبلک میں لوگوں کو تھپڑ مارا تو معافی بھی ٹی وی پر آکر مانگیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں