ڈالر اچانک 163 تک کیسے پہنچا؟ وجہ سامنے آگئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) :ڈالر کی قیمت میں ایک دن میں 6 روپے سے زائد اضافے کی وجہ سامنے آ گئی۔تفصیلات کے مطابق ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکا ہے۔آج سے قبل پاکستان میں کبھی بھی ڈالر اتنا مہنگا نہیں ہوا۔سینئیر تجزیہ نگاروں نے ڈالر کے 180روپے تک جانے کی پیشگوئی کی ہے۔آج کے دن ڈالر کی قیمت میں 6روپے سے زائد کا اضافہ ہوا۔

اس حوالے سے معروف صحافی صابر شاکر نے ٹویٹ کیا ہے کہ آج انٹر بینک میں ڈالر کی اچانک اُڑان کا مقصد اور وجہ ایمنسٹی سکیم ہے ڈالر رکھنے والوں کو ترغیب دی جارہی ہے کہ وہ اپنے ڈالر بینک کےزریعےکیش کروالیں اور ظاہر کریں۔ڈالر کی انٹربنک اُڑان 30جون تک جاری رہیگی۔ پہلی بار اوپن مارکیٹ میں ڈالر سستا اور انٹر بینک مہنگا ہے۔

اب سے کچھ دیر قبل ٹر بینک میں ڈالر کی قیمت 162 روپے 50پیسے ہو گئی تھی۔
انٹر بینک میں ڈالر162 روپے 50پیسے پر ٹریڈ کر رہا تھا،تاہم اب ڈالر کی قیمت 163ہو گئی ہے،کہ گذشتہ روز انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید 156 روپے 97 پیسے سے بڑھ کر 157 روپے ہو گئی تھی اور قیمت فروخت 157 روپے 17 پیسے سے بڑھ کر 157 روپے 20 پیسے مقرر ہوئی تاہم مقامی اوپن مارکیٹ میں امریکی کرنسی کی قیمت خرید 156 اور قیمت فروخت 156 روپے 70 پیسے پر مستحکم ہو گئی تھی۔

کرنسی مارکیٹ کے ذرائع نے بتایا کہ آئی ایم ایف سے پاکستان کے معاہدے کی خبروں کے بعد روپے پر دباؤ کے باعث ڈالر مہنگا ہوا ۔ ذرائع کے مطابقپاکستان کے آئی ایم ایف سے معاہدے کے بعدروپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت میں اضافے کی خبریں گردش کررہی تھیں ۔ واضح رہے کہ تاحال قومی اسمبلی نے مالی سال 20-2019ء کا بجٹ بھی منظور نہیں کیا۔سیاسی مبصرین نے ڈالر کی قیمت میں اضافے کے بعد حکومت پر سخت تنقید کی ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں