بھارتی کھلاڑیوں کی نارنجی جرسیاں: ملک گیر تنازع ہوا کھڑا

آئی سی سی کرکٹ ورلڈکپ 2019ءمیں بھارتی کھلاڑیوں کی نارنجی رنگ کی جرسیوں کے استعمال پر بھارت میں ملک گیر تنازع کھڑا ہو گیا ہے اور اپوزیشن جماعتوں نے اسے مودی کی چال قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کرکٹ کو بھی سیاسی رنگ دینا چاہتے ہیں۔
ذرائع کے مطابق ورلڈکپ 2019ءمیں بھارت اور انگلینڈ کے میچ میں بھارتی کھلاڑی نیلے رنگ کی بجائے نارنجی رنگ کی جرسیاں استعمال کریں گے جسے بھارتی اپوزیشن جماعتوں نے سیاسی رنگ دیتے ہوئے نیا تنازع کھڑا کر دیا ہے۔اپوزیشن جماعتوں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نریندرمودی کی یہ ایک چال ہے، وہ کرکٹ کو بھی سیاسی رنگ دینا چاہتے ہیں ، ہمارا قومی رنگ نیلا ہے تو نارنجی جرسیاں پہننے کا کیا مقصد ہے۔
انہوں نے کہا ہے کہ یہ مودی کی جانب سے ملک میں تعصب پھیلانے کی ایک سازش ہے، مودی یاد رکھیں کہ بھارتی پرچم ترنگا بھی ایک مسلمان نے تریب دیا تھا۔ اگر قومی ٹیم کی وردی کا رنگ بدلنا ہی ہے تو اسے ترنگا رنگ دے دیں، قومی ٹیم کو صرف نارنجی رنگ کی جرسیاں پہنانے کے پیچھے مودی کا کیا مقصد ہے۔
ابو عاصم نے مودی پر تنقید کرتے ہوئے مزید کہا کہ اس سے واضح ہو جاتا ہے کہ مودی ملک میں تعصب کی آگ بھڑ کا رہے ہیں اور کھیل کو بھی سیاسی رنگ دینا چاہتے ہیں۔دوسری جانب بھارتی کرکٹ ٹیم کے باﺅلنگ کوچ ارون نے گزشتہ روز ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ہمیں اندازہ نہیں نہ ہمیں بتایا گیا ہے کہ ہم کونسا رنگ پہن کر میدان میں اتریں گے ہماری توجہ صرف کھیل پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا خون بھی نیلا ہے اور بنیادی رنگ بھی نیلا ہی ہے۔
واضح رہے کہ اتوار کو برمنگھم کے ایجبسٹن گراؤنڈ میں بھارتی ٹیم اپنے 7ویں میچ کے دوران نارنجی رنگ کی جرسیاں پہنے گی جبکہ آئی سی سی ایونٹس میں حصہ لینے والی ٹیمیں 2رنگ کی کٹس استعمال کرسکتی ہیں۔آئی سی سی ورلڈکپ 2019ءکی میزبانی کرنے والی انگش ٹیم نیلے رنگ کی کٹ میں ہی سارے میچز میں حصہ لے گی، جبکہ باقی تمام ٹیمیں 2رنگ کی کٹس استعمال کرسکتی ہیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں