جیو نیوز پر آصف زرداری کا انٹرویو رکوا دیا گیا

اسلام آباد ( آن لائن) نجی ٹی وی جیو نیوز پر چلنے والے سابق صدر آصف علی زرداری کے انٹرویو کو رکوادیا گیا ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام کیپٹل ٹاک پر سابق صدر آصف علی زرداری کا انٹرویو کیا جارہا تھا۔ یہ پہلے سے ریکارڈ شدہ پروگرام تھا جو تھوڑی ہی دیر چلا لیکن پھر اسے بند کرادیا گیا۔ پروگرام بند ہونے کے بعد جیو نیوز پر ٹائم پورا کرنے کیلئے یا تو اشتہارات چلائے جارہے ہیں یا خبریں اور مختلف پروگرامز کے پرومو چلا کر وقت پورا کیا جارہا ہے۔

پروگرام کے اینکر حامد میر کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ چند منٹ بعد ہی آصف زرداری کا جیو پر چلنے والا انٹرویو رکوادیا گیا اور جن لوگوں نے یہ انٹرویو رکوایا ہے ان میں اتنی ہمت نہیں ہے کہ سرعام اس کو قبول کرسکیں۔

حامد میر نے اپنے ناظرین سے معذرت کی اور کہا کہ وہ بہت جلد اس حوالے سے تفصیلات منظر عام پر لے آئیں گے لیکن ناظرین کیلئے یہ سمجھنا مشکل نہیں ہوگا کہ انٹرویو کس نے رکوایا ہے، ’ ہم ایک آزاد ملک میں نہیں رہ رہے۔‘

حامد میر نے کہا کہ جیسے ہی جیو نیوز پر یہ اعلان کیا گیا کہ آج کا کیپٹل ٹاک نشر نہیں کیا جائے گا تو انہیں دنیا بھر سے فون کالز موصول ہونا شروع ہوگئی ہیں اور لوگ وجہ جاننے کی کوشش کر رہے ہیں۔ حامد میر نے کہا کہ ہمیں دشمنوں کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ ریاست خود پاکستان کو بدنام کر رہی ہے۔

سینئر صحافی کا کہنا تھا کہ اس میں غلط ہی کیا ہے کہ انہوں نے سابق صدر آصف زرداری سے کچھ سوالات کیے اور انہوں نے اس کے جوابات دیے، کیا آصف زرداری سابق ترجمان کالعدم تحریک طالبان پاکستان احسان اللہ احسان سے بڑے مجرم ہیں؟ حامد میر نے بتایا کہ احسان اللہ احسان نے آفیشل کسٹڈی کے دوران انٹرویو دیا تھا جبکہ آصف زرداری کا انٹرویو پارلیمنٹ ہاﺅس میں کیا گیا ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں