مہنگی روٹی۔۔۔ تحریک انصاف کے اہم رہنما کا سیاست چھوڑنے کا اعلان

لاہور(ویب ڈیسک) آج صبح نان بائی ایسوسی ایشن کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ آٹے کی قیمت میں بے پناہ اضافے کو مدنظر رکھتے ہوئے روٹی اور نان کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کیا جا رہا ہے۔اس اعلان پر جہاں عوام کی جانب سے بہت زیادہ پریشانی کا اظہار کیا جا رہا ہے وہاں عوامی نمائندے بھی فکر مند دکھائی دیتے ہیں۔

آج صوبائی وزیر صنعت و تجارت و سرمایہ کاری اسلم اقبال سے ایک صحافی نے جب نان بائی ایسوسی ایشن کی جانب سے روٹی کی قیمتوں میں اضافے پر سوال کیا تو انہوں نے جواب میں کہا کہ اگر روٹی مہنگی ہوئی تو میں سیاست چھوڑ دُوں گا۔ لاہور سے پاکستان تحریک انصاف کے ٹکٹ پر منتخب ہونے والے صوبائی وزیر کا کہنا ہے کہ وہ نان بائی ایسوسی ایشن کی جانب سے روٹی کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاجاً سیاست چھوڑ دیں گے۔

واضح رہے کہ نان بائی ایسوسی ایشن کے آج منعقدہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ آٹے کی قیمتوں میں بے پناہ اضافے کے بعد تندور پر ملنے والی سادہ روٹی، نان اور خمیری روٹی کی قیمتوں میں بھی اضافہ کیا جا رہا ہے۔ نان بائی ایسوسی ایشن کے مطابق سادہ روٹی کی قیمت 7 روپے سے بڑھا کر 15 روپے کی جا رہی ہے جبکہ نان کی قیمت 12 روپے کی بجائے 20 روپے ہو گی۔
اسی طرح خمیری روٹی کی قیمت بھی 12روپے کی بجائے 20 روپے ہو گی۔ قیمتوں میں اضافے کا اطلاق سوموار کے دِن سے ہو گا۔ واضح رہے کہ چند ہفتوں کے دوران تندور پر ملنے والی نان اور روٹی کی قیمتوں میں یہ دُوسری بار اضافہ کیا جا رہا ہے۔ بجٹ کا اعلان ہونے کے بعد جب آٹے اور میدے کی قیمتیں بڑھیں تو نان بائی ایسوسی ایشن نے بھی روٹی کی قیمت 6 روپے سے بڑھا کر 7 روپے کر دی تھی اور نان و خمیری روٹی کی قیمت 10 روپے سے بڑھا کر 12 روپے کر دی گئی تھی۔

نان بائیوں کا کہنا ہے کہ ہم مہنگے داموں آٹے کی بوری خرید کر کم قیمت میں لوگوں کو نہیں بیچ سکتے۔ کیونکہ گیس کے بِلوں کی مد میں بھی حکومت کی جانب سے خوفناک اضافہ کر دیا گیا ہے۔ جس کے باعث ہمارا گزارہ نہیں ہو پاتا۔ اگر ہم کم قیمت میں روٹی بیچیں گے تو ہمارے اپنے گھروں میں بھُوک ناچنے لگے گی۔ اس لیے ہم قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کرنے میں مجبور ہو گئے ہیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں