چین کو یورپ تک پہنچنے کے لئے پاکستان کے علاوہ ایک اور راستہ مل گیا، 1250 میل لمبی سڑک بنانے کا اعلان ہوگیا

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) چین پاکستان میں اقتصادی راہداری بنا رہا تھا اور اس کے ذریعے یورپ تک اپنا تجارتی سامان پہنچانا چاہتا تھا تاہم اب اسے پاکستان کے علاوہ بھی یورپ تک پہنچنے کا ایک راستہ مل گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق یہ نیا راستہ روس سے ہو کر جاتا ہے۔ گزشتہ روز روس نے اپنی حدود سے 1250میل ہائی وے بنانے کی منظوری دے دی ہے جو چین کے تجارتی سامان کو یورپی منڈیوں تک رسائی دے گی۔

رپورٹ کے مطابق روس میں یہ سڑک روس کے بیلاروس کے ساتھ ملحق بارڈر سے قازقستان کے بارڈر تک روسی حدود میں جائے گی۔ اس سڑک کی تعمیر پہلے ہی شروع ہو چکی ہے اور اس کی تکمیل میں 12سے 14سال لگیں گے۔ یہ منصوبہ گازپروم کے سابق ڈپٹی چیئرمین الیگزینڈر ریازینوف کے ذہن کی پیداوار تھا جس کی اب منظوری دی گئی ہے۔ اس روڈ کے ذریعے مشرقی چین اور یورپ کے درمیان زمینی سفر بہت کم رہ جائے گا۔ یہ شاہراہ بھی قدیم ’سلک روٹ‘ کا حصہ تھی، چین جسے دوبارہ تعمیر کرنے کی بہت عرصے سے کوشش کر رہا تھا۔ یہ سڑک تعمیر کے بعد شنگھائی سے جرمنی کے شہر ہیمبرگ تک پھیلے بہت بڑے راہداری نیٹ ورک کا حصہ بن جائے گی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں