حکومت کے ایکشن نے کام کر دکھایا، فلور ملز ایسوسی ایشن نے آٹے کی قیمت میں اضافہ واپس لے لیا

لاہور (ویب ڈیسک) فلور ملز ایسوسی ایشن نے آٹے کی قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ واپس لے لیا، 17 فیصد سیلز ٹیکس کے باعث 500 روپے سے زائد کا اضافہ نہیں کیا جائے گا، 50 کلو فائن آٹے کی قیمت میں 350 روپے جبکہ سادہ آٹے کی قیمت میں 325 روپے کا اضافہ کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق آل پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کی جانب سے آٹے کی قیمتوں میں اعلان کیا گیا اضافہ واپس لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

فلور ملز ایسوسی ایشن نے اعلان کیا ہے کہ آٹے کی 50 کلو والی بوری کی قیمت میں 500 روپے سے زائد کے اضافے کا فیصلہ واپس لیا جاتا ہے۔ 50 کلو فائن آٹے کی قیمت میں 350 روپے تک کا اضافہ کیا جائے گا۔ جبکہ 50 کلو سادہ آٹے کی قیمت میں 325 روپے کا اضافہ کیا جائے گا۔ یہ اضافہ حکومت کی جانب سے عائد کردہ 17 فیصد سیلز ٹیکس کی مد میں کیا جائے گا۔
اس سے قبل آٹے کو سیلز ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دیا جاتا تھا۔

تاہم اب آٹے پر بھی سیلز ٹیکس عائد کر دیا گیا ہے۔ دوسری جانب آٹے کی قیمت میں اضافے کو بہانہ بنا کر تندوروں کی جانب سے بھی روٹی اور نان کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کا اعلان کردیا گیا ہے۔ نائن بائی ایسوسی ایشنز کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ پیر سے روٹی کی نئی قیمت 15 روپے جبکہ سادہ تندوری نان کی نئی قیمت 10 کی بجائے 20 روپے ہوگی۔ حکومت کی جانب سے نائن بائی ایسوسی ایشن کو روٹی کی قیمت میں اس قدر ہوشربا اضافے کرنے سے روکنے کی کوشش کی جا رہی تھی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں