حکومت کے پہلے دس ماہ میں 20 اچھے کام عمران خان نے ابتدائی 10ماہ میں نئے پاکستان کی بنیاد ڈال دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) : پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آنے کے بعد سے ہی حکومت کو کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ گیا تھا جس پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا لیکن دس ماہ گزر جانے کے بعد اب ایسا لگ رہا ہے جیسے پاکستان تحریک انصاف کا ”نیا پاکستان” بننا شروع ہو گیا ہے۔ موجودہ حکومت کے پہلے دس ماہ میں عمران خان اور ان کی حکومت نے 20 اچھے اور بڑے کام کیے۔

پہلا تو یہ کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے پہلے دس ماہ میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 30 فیصد تک کم ہوا۔ تجارتی خسارے میں بھی 14 فیصد کمی ہوئی۔ بیلنس آف پے منٹ ہوا جس کے تحت ڈیفالٹ ہونے کا خدشہ ٹل گیا۔ منی لانڈرنگ کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز ہوا۔ احتسابی عمل کو مکمل حمایت حاصل رہی۔
سینکڑوں ارب کی قومی زمین واپس حاصل کی گئی۔ بجلی اور گیس چوری کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز کیا گیا۔

کسانوں کو پوری اور بروقت ادائیگی شروع ہو گئی۔ قبائلی علاقوں یعنی فاٹا میں مخصوص اور اسپیشل ڈیویلپمنٹ فنڈ کا آغاز کیا گیا۔ پاکستان نے بھارتی جارحیت کے خلاف اپنا بھرپور دفاع کیا۔ پاکستان کی کامیاب خارجہ پالیسی کا ایک مرتبہ پھر سے آغاز ہوا جس کے تحت پاکستان کے سعودی عرب ، چین ، متحدہ عرب امارات اور ملائیشیا سے دوبارہ اچھے تعلقات بحال ہوئے جس کی بنا پر پاکستان کو بے حد فائدہ بھی پہنچا۔

بیرون ملک قید پاکستانیوں کی رہائی ممکن ہو سکی۔ حکومت کی جانب سے احساس پروگرام شروع کیا گیا جس کے تحت غریب افراد کی امداد ممکن ہو سکی۔ بے گھر اور مسکین افراد کے لیے پناگاہیں کھولی گئیں۔80 ملین پاکستانیوں کو ہیلتھ کارڈ کا اجرا کیا گیا۔ روڈ ٹو مکہ پراجیکٹ کا آغاز کیا گیا۔ ملک میں سیاحت کے فروغ کے لیے اقدامات کیے گئے۔ پی ٹی آئی کے دور میں مہمند ڈیم کا افتتاح کیا گیا۔ یہی نہیں بلکہ پاکستان تحریک انصاف کے اقتدار میں کلین اینڈ گرین پاکستان مہم کا بھی آغاز کیا گیا۔ سوشل میڈیا پر پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو ان 20 نکات پر کافی پذیرائی بھی حاصل ہوئی اور عوام نے اُمید ظاہر کی کہ آئندہ ماہ میں پی ٹی آئی مزید اچھی کارکردگی دکھائے گی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں