جج ارشد ملک کی ویڈیو میاں طارق سے کس ن لیگی رہنما نے خریدی ؟ بڑا نام سامنے آگیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) جج ارشد ملک کی ویڈیو کے معاملے میں ایک نیا نام سامنے آگیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ن لیگی رہنما میاں رضا نے جج ارشد ملک کی ویڈیو میاں طارق سے خریدی تھی۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ یہ ویڈیو میاں رضا نے 5ماہ پہلے خریدی تھی اور اس کے ذریعے جج ارشد ملک کو بلیک میل کرنے کی کوشش کی جاتی رہی۔ میاں رضا کا تعلق پاکستان مسلم لیگ ن ہے اور انہوں نے جج ارشد ملک کی ویڈیو میاں طارق سے 5ماہ پہلے خریدی تھی۔

اس سے پہلے پتا چلا تھا کہ ہ جج ارشد ملک کی ویڈیو میاں طارق نامی شخص نے بنائی۔سینئیر صحافی عمران میر نے بتایا ہے کہ میاں طارق ملتان کا رہائشی ہے اور اسکا ملتان میں پرانے ٹی وی سیٹوں کا کام ہے اور ملتان میں طارق سینٹر کے نام سے ملتان میں میاں طارق کاکاروبار ہے۔ذرائع کے مطابق میاں طارق غر اخلاقی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی وجہ سے ملتانمیں کافی زیادہ بدنام ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ جج ارشد ملک کی ویڈیو میاں طارق نے بنائی تھی۔ انہوں نے کہا کہ میاں طارق کا ایک بھائی میاں ادریس ہے اور میاں ادریس کو منشیات کے کیس میں سزائے موت ہو گئی تھی، جج ارشد ملک جو اس وقت ملتان میں ایڈیشنل ڈسٹرک اینڈ سیشن جج تھے انہوں نے ہی میاں ادریس کو سزائے موت سنائی تھی۔ ذرائع کے مطابق میاں طارق نے اس وقت کوششیں کی کہ انکے بھائی کو چھوڑ دیا جائے لیکن ایسا نہ ہو سکا تو اس نے میاں طارق نے جج ارشد ملککے ساتھ دوستی کی اور ایک ذاتی محفل میں ان کی کمزوریوں کا فائدہ اٹھا کر غیر اخلاقی ویڈیو بنائی جس میں وہ کچھ غیر اخلاقی کام کر رہے تھے اور اس ویڈیو سے بلیک میل ہو کر جج ارشد ملک نے میاں ادریس کو ضمانت دے دی تھی۔

اب اس حوالے سے ایک نیا نام سامنے آگیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ن لیگی رہنما میاں رضا نے جج ارشد ملک کی ویڈیو میاں طارق سے خریدی تھی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں