کلبھوشن یادیو کی گرفتاری میں اہم ترین کردار ادا کرنے والے پاکستانی سپوت کی عظیم کہانی

راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی جاسوس کلبھوشن یادو کا نام اس کی گرفتاری کے بعد سے ہر پاکستانی نے سن رکھا ہے مگر اس دہشت گرد بھارتی ایجنٹ کو پکڑنے کے لیے پاک فوج کے ایک سپوت نے ایسی سرفروشی دکھائی کہ آج پوری پاکستانی قوم اس شہید کو سلام پیش کر رہی ہے۔ ویب سائٹ ’پروپاکستانی‘ کے مطابق اس جانباز کا نام کیپٹن قدیر احمد تھا۔ وہ ایک امیر خاندان میں پیدا ہوئے مگر ملک و قوم کے لیے کچھ کرگزرنے کا جذبہ انہیں پاک فوج میں لے آیا جہاں سے انہیں ان کی قابلیت اور کام سے لگن کے باعث آئی ایس آئی میں شامل کر لیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق کیپٹن قدیر احمد تین سال تک ایک بھکاری کا روپ دھارے بلوچستان میں کلبھوشن یادو کا پیچھا کرتے رہے اور اس کے نیٹ ورک کا سراغ لگانے کی کوشش کرتے رہے۔ جب انہوں نے اس کے نیٹ ورک کا سراغ لگالیا تو اسے گرفتار کر لیا۔ کیپٹن قدیر احمد کی انہی دنوں بھکاری کے روپ میں بنائی گئی تصاویر سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہیں اور پاکستانی قوم کے اس بہادر بیٹے کو خراج عقیدت پیش کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ کیپٹن قدیر احمد گزشتہ سال جون میں اپنی بیمار بیٹی سے ملنے گھر واپس آ رہے تھے کہ کار حادثے میں ان کی شہادت ہو گئی۔

https://twitter.com/MiaNaMateenPti/status/1151498562418749441

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں