ڈالر کی ذخیرہ اندوزی روکنے کیلئے حکومت کا شاندار منصوبہ 160روپے جمع کروانے پر کتنی’ سیونگ‘ ہوگی؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک) : حکومت کی ایک سالہ کارکردگی پر نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے ماہر معیشت ڈاکٹر اشفاق حسن نے کہا کہ جس طرح کے چیلنجز کا موجودہ حکومت کو سامنا تھا اتنی جلدی کوئی مثبت پیش رفت کی اُمید کرنا تھوڑا زیادہ اُمید لگانا ہے۔ بہت زیادہ چیلنجز تھے ، یہ چیلنجز جان بوجھ کر دئے گئے تھے تاکہ پاکستان تحریک انصاف ک حکومت کے راستے میں زیادہ سے زیادہ کانٹے بچھائے جائیں اور ان کے لیے زیادہ سے زیادہ مشکلات کھڑی کی جائیں۔

انہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں نے موجودہ حکومت کی راہ میں یہ کانٹے جان بوجھ کر اس لیے بچھائے گئے تھے تاکہ ہم باہر سے بیٹھ کر تنقید کر سکیں۔ ان کے پاﺅں میں کانٹے چُبھ رہے ہوں اور ہم باہر سے بیٹھ کر کہیں کہ دیکھیں یہ آئے تھے، اور کیا کام دکھا رہے ہیں ، انہوں نے کچھ بھی نہیں کیا۔
اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ بہت زیادہ چیلنجز کا سامنا تھا ۔ لیکن بات یہ ہے کہ ان چیلنجز کا سامنا کرنے کے لیے یہ حکومت اُس طرح کی مین پاور اکٹھا کرنے میں ناکام رہی جس کی ضرورت تھی۔

ڈالر کی ذخیرہ اندوزی کے لیے حکومت کی تجویز کردہ اسکیم ڈالرڈینومینیٹد بانڈز کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ماہر معیشت ڈاکٹر اشفاق حسن نے کہا کہ اس حوالے سے وزارت خزانہ میں بات ہو رہی ہے ، گورنر اسٹیٹ بینک کا ماننا ہے کہ اس طرح ہم لوگوں کو سیونگ کی ترغیب دیں گےا۔ اس اسکیم کو ڈالر ڈینومینیٹڈ اسکیم کا نام دیا جائے گا جس کے مطابق اگر آپ 160 روپے جمع کروائیں تو وہ کہے گا کہ آپ نے ایک ڈالر مالیت کی سیونگ کی ہے۔انہوں نے گورنر اسٹیٹ بینک کی اس تجویز کردہ اسکیم سے متعلق مزید کیا بتایا آپ بھی دیکھیں:

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں