درویش افسر کا حسن اخلاق ، ساجد جان سے گیا، زیر علاج ڈی ایس پی کو برخاست کرانے کی کوشش ناکام

لاہور(رپورٹ:اسد مرزا) پنجاب پولیس کے فرشتہ صفت اور درویش پولیس افسر سی ٹی او لاہور کیپٹن (ر) لیاقت ملک کی جانب سے چھٹی نہ ملنے پر کانگو وائرس کا شکارٹریفک اسٹنٹ ساجدراوی روڈ سکیٹر میں دوران ڈیوٹی بیماری کی حالت میں بے بس ہو کر گرا اور جان کی بازی ہار گیا ۔

جس پر ٹریفک پولیس کے ماتحتوں اور شہریوں میں شدید تشویش پائی جا تی ہے ۔ذرائع کا کہناہے کہ ٹریفک اسٹنٹ کو ایک طرف سی ٹی او لاہور کیپٹن (ر) لیاقت ملک نےپنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میںزیر علاج ڈی ایس پی ندیم بٹ کے خلاف ڈیوٹی سے غیر حاضر رہنے کے متعلق سپیشل رپورٹ بنا کر آئی جی پنجاب کو بھجوا دی اور سفارش کی کہ اسکے خلاف سخت محکمانہ کارروائی کی جائے ۔ آئی جی پنجاب کے حکم پر جب اس معاملے کی انکوائری ہوئی تو ڈی ایس پی ٹریفک ندیم بٹ اپنی میڈیکل رپورٹس انکوائری میں لے گیا اور بتایا کہ اسے اہل خانہ نے ہارٹ اٹیک کے باعث ہسپتال داخل کرایا اور حکام کو اطلاع بھی کی تب محکمے کے متعلقہ شعبہ کے عملے نے ڈی ایس پی کی رپورٹ اور ہسپتال میں تصاویر بنا کر افسران کو بھجوائی اور اسکا سرکاری سطح پر علاج بھی کروایا جبکہ ایس پی سٹی حماد و دیگر نے اسکی عیادت بھی کی جس پر سی ٹی او کی اس جھوٹی سپیشل رپورٹ کو داخل دفتر کر دیا گیا ۔آئی جی پنجاب نے سی ٹی او کے اس رویہ پر ڈی ایس پی کی خواہش پر اسکاتبادلہ ایس پی یو میں کر دیا ۔ سکا۔چیف ٹریفک آفیسر ملک لیاقت کا کہنا ہے کہ ٹریفک اسسٹنٹ تین یوم چھٹی گزارنے کے بعد پہلے روز ڈیوٹی پر آیا تھا جبکہ ٹریفک اسسٹنٹ کی طرف سے مزید چھٹی کی درخواست نہیں دی گئی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں