لاہور: ایماندار سیٹ اپ ، پولیس افسران پریشان ڈی پی او تعینات ہونے کے لئے سفارشیں۔ پول کھل گیا

لاہور (رپورٹ:اسد مرزا)ڈی آئی جی آپریشن لاہور اشفاق احمد خان نے لاہور پولیس کے دو ایس پیز کی جانب سے ڈی پی او تعینات ہونے کے لئے سفارشیں کرانے پر ناراضگی کا اظہار کیا اور میٹنگ میں تمام افسران کی سخت باز پرس کی ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈی آئی جی آپریشن نے میٹنگ کے دوران کہا کہ آپ لاہور میں پوسٹنگ لے لیتے ہیں تو پھر لابنگ کر کے ڈی پی او تعیناتی کے لئے سفارشیں کرواتے ہیں تاکہ ڈی پی او تعینات ہو کر اکاونٹنٹ کی مدد سے فنڈز خردبرد کریں آپ یہاں “کام “ کرکے آپ اضلاع میں جانے کے لئے سفارشیں کروا رہے ہو ۔

آپ اللہ کا شکر کریں کہ آپ لاہور آپریشن ونگ میں آگئے ہیان ورنہ کئی سال انوسٹی میں بیٹھے رہنا تھا ۔بتایا گیا ہے کہ لاہور میں ایماندار پولیس افسران کی ٹیم جن میں سی سی پی او اور ڈی آئی جی اشفاق احمد خان آپریشن اور انوسٹی گیشن ڈاکٹر انعام وحید تعینات ہونے کے بعد ایس پیز حضرات کی دال نہیں گل رہی اور وہ پہلے کی طرح اپنی حکمرانی کے بل بوتے پلاٹوں کی خریدوں فروخت، قبضے، جھوٹے مقدمات درج کرواکے ریکوری اور دیگر معامالات میں کامیاب نہیں ہو رہے۔ اسی طرح افسران کی جانب سے چیک اینڈ بیلینس اور ڈیوٹی پر افسران کی موجودگی کو یقینی بنانے کے لئے ایس ایس پی آپریشن اسماعیل کھاڑک کو بھی ٹاسک سونپ رکھا ہے جس پر

ایماندار افسران کی ٹیم سے دلبرداشتہ ہو کر کافی عرصہ سے تعینات ایک پی ایس پی سمیت دو ایس پیز کسی ضلع میں ڈی پی او تعینات ہونے کے لئے سفارشیں کروا رہے ہیں ۔ ایک پولیس افسر نے رابطہ کرنے پر بتایا کہ تمام افسران کی کوشش ہوتی ہے کہ وہ ڈی پی او تعینات ہوں لیکن ڈی آئی جی آپریشن نے میٹنگ میں کسی کا نام لئے بغیر ایسی بات کی تھی

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں