حکومت کو ناکام بنانے کی سازش بے نقاب ڈپٹی کمشنر، آر پی اوز ،ڈی پی اوز اور ای ٹی اوز شامل ۔تبادلوں کا امکان

لاہور(رپورٹ:اسد مرزا)پنجاب کے حساس اداروں نے حکومت پنجاب کو بدنام کرنے والے پولیس و سول بیوروکریٹس کا سراغ لگا لیا ہے اس حوالے سے آئندہ دنوں پنجاب میں وسیع پیمانے پر آر پی اوز ، ڈی پی اوز، ڈپٹی کمشنرز اور ای ٹی اوز کے تبادلے متوقع ہیں۔اس حوالے سے ایسے افسران کی فہرستیں مرتب کرنے کے علاوہ انکے خلاف مہنگائی ، ڈینگی اور جرائم کے خاتمے کے جھوٹے دعووں اور عوامی مفاد کے لئے موثر اقدامات نہ کرنے کے حوالے سے چارج شیٹ بھی تیار کی جا رہی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ پنجاب پولیس کے اعلی افسران، ڈپٹی کمشنر اور ای ٹی او نے ایسے اقدامات کئے جس سے حکومت کی نیک نامی کی بجائے عوامی سطح پر حکومت کی بدنامی ہو رہی ہے۔حکومتی حلقے اس حوالے سے پریشان ہیں کہ انکی صفوں میں کہیں ن لیگ کے ہمدرد تو نہیں جو حکومت کو ناکام بنانے کےلئے کاغذی کارروائی کر رہے ہیں ۔اس صورتحال پر حساس ایجنسیز نے تحقیقات کے بعد حکومت کو اصل حقائق سے آگاہ کر دیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ راولپنڈی میں ڈینگی پھیلنے کی وجہ ڈپٹی کمشنر راولپنڈی ہی نکلے جو وزیر اعلی پنجاب اور چیف سیکرٹری کو غلط رپورٹس دیتے رہے کہ انہوں نے ڈینگی کے خاتمے کے لئے مسلسل سپرے کروا رہے ہیں لیکن حقیقت میں ان علاقوں میں ڈینگی کا شکار مریض نکلے جن علاقوں میں سپرے کیا گیا تھا۔وزیر اعلی پنجاب نے اس حوالے سے مکمل تحقیقات کا حکم بھی دیدیا ہے کہ یہ ڈپٹی کمشنر کی پیشہ روانہ نااہلی، کرپشن یا اپوزیشن جماعت کے اشارے پر حکومت کو غلط رپورٹس دیکر بدنام کیا گیا۔ اسی طرح ڈپٹی کمشنر لاہور صالحہ سعید کو بھی تبدیل کرنے کا قوی امکان ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈپٹی کمشنر لاہور بھی ڈینگی کے حوالے سے بروقت موثر اقدامات نہیں کر سکی اور ذیادہ مریضوں کی تعداد بڑھنے کے باوجود غلط رپورٹس حکومت کو بھجوائی گئیں۔ذرائع کا دعوی حکومت پنجاب کی جانب سے خودساختہ مہنگائی کرنیوالوں کے خلاف کریک ڈائون کرنے کے لئے ٹاسک فورس بنائی گئی لیکن اس کے ایک اجلاس کے بعد پنجاب میں خود ساختہ مہنگائی کرنے والوں کے خلاف مناسب کارروائی نہیں کی گئی بلکہ ڈپٹی کمشنرز سمیت ماتحت کاغذی کارروائی تک محدود رہے جبکہ عوامی مفاد عامہ کے کوئی اقدامات نہ کئے گئی ۔اسی طرح گوجرانوالہ ، بہاولپور ،فیصل آباد ، ڈیرہ غازی خان ڈویژنوں کے متعدد ڈی سی اور ای ٹی او کو تبدیل کیا جا ہیگا اسی طرح وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب عثمان کے پولیس میں ریفارمز اور تھانہ کلچر کے خاتمے کے لئے ہدایات کو نظر انداز کرنے ،عوامی مسائل کے حل کے علاوہ جرائم میں کمی لانے میں اپنا کردار ادا نہ کرسکے لیکن پولیس تشدد سے ہلاکتوں کے واقعات نے حکومتی دعووں کی قلعی کھول دی ۔ اس ضمن میں آر پی او ڈیرہ غازی خان ،بہاولپور گوجرانوالہ اور جھنگ، شیخوپورہ خافظ آباد کے علاوہ مختلف اضلاع کے ڈی پی اوز کے ساتھ محکمہ ایکسائز کے ای ٹی اوز کو تبدیل کئے جانے کا امکان ہے

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں