آئی جی پنجاب کا دبنگ اعلان۔ پنجاب میں اے ایس پی ایس ایچ او نہیں ہونگے

لا ہو ر (رپو رٹ اسد مر ز ا)وفا قی حکو مت میں پو لیس اسٹیشن میں اے ایس پی کو بطو ر ایس ایچ او تعینا ت کر نے کے بعد پنجا ب کے بڑ ے اضلا ع میں یا تھا نے میں اے ایس پی یا ڈی ایس پی کو ایس ایچ او تعینا ت کیئے جا نے کا امکا ن ہے اس نظا م کے تحت اے ایس پی ایس ایچ او کے ما تحت انسپکٹر آ پر یشن اور انسپکٹر انو سٹی گیشن کا م کر ینگے اگر یہ تجر بہ کا میا ب رہا تو پنجا ب بھر میں اسی نظا م کو نا فذ کر دیا جا ئیگا ۔

بتا یا گیا ہے کہ آ ئی جی اسلا م آ با د عا مر ذوالفقا ر نے وزیر اعظم پا کستا ن عمر ان خا ن کو یہ تجو یز دی جو وزیر اعظم کی منظو ر کے بعد پا ئلیٹ پر اجیکٹ کے طو ر پر تجر بہ کیا جا ئیگا ۔اس حو الے سے آ ئی جی پنجا ب کیپٹن (ر)عا رف نو از نے روزنا مہ جہا ن پا کستا ن سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ یہ تجر بہ اسلا م آ با د میںہو رہا ہے لیکن پنجا ب میں ایسا تجر بہ ممکن نہیں ۔آ ئی جی پنجا ب نے کہا کہ پنجا ب کے تھا نو ں میں یہ نظا م نہیں چل سکتا کیو نکہ اسلا م آ با د میں چند پو لیس اسٹیشن ہیں لیکن پنجا ب میں 700سے زائد تھا نے ہیں اتنے اے ایس پی اور ڈی ایس پی کہا ں سے لا ئے گئے۔اس سے قبل کر اچی میں یہ مشق کی گئی تھی لیکن وہا ں نا کا م ہو گئی ۔کیو نکہ پو لیس رولز میں ایس ایچ او ز کے اختیا ر ت انسپکٹر کے پا س ہے جبکہ اے ایس پی کو ایس ایچ او کی ٹر یننگ نہیں ملتی اس لیئے وہ پو لیس اسٹیشن کو احسن طر یقے سے نہیں چلا سکتے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں