کویت نے بھی فوج کو ہائی الرٹ کردیا؟ دنیا کی نظریں مشرق وسطیٰ پر، لیکن آخر کیوں؟

کویت نے سعودی عرب کی تیل تنصیبات پر حملوں اور خطے کی صورتحال کے پیش نظر مسلح افواج کو ہائی الرٹ کردیا۔

کویت کے نائب وزیر اعظم و وزیرخارجہ الشیخ صباح الخالد الصباح نے یہ فیصلہ مشرق وسطیٰ کی حالیہ کشیدہ صورتحال کے باعث کیا ہے۔

گزشتہ دنوں سعودی عرب کی دو بڑی آئل فیلڈز پر ڈرون حملے کیے گئے تھے جن میں آرامکو کمپنی کے بڑے آئل پروسیسنگ پلانٹ عبقیق اور مغربی آئل فیلڈ خریص شامل ہیں۔

الشیخ صباح الخالد الصباح کا کہنا ہے کہ مسلح افواج کو ملک سیکیورٹی کو غیر مستحکم کرنے والے کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی روک تھام کیلئے تیار رہنا چاہیے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ کویت تیل تنصیبات پر حملوں کے خلاف سعودی عرب کے ساتھ کھڑا ہے۔

خیال رہے کہ کویت سعودی عرب کا اہم اتحادی ہے جو خطے کے ہر معاملے پر سعودی عرب کی حمایت کرتا ہے۔

سعودی عرب میں حملوں کے بعد مشرق وسطی میں سخت کشیدگی پائی جاتی ہے اور ساتھ ہی تیل کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوگیا ہے جبکہ امریکا نے براہ راست ان حملوں کا ذمہ دار ایران کو ٹھہرایا ہے تاہم ایران نے اِن الزامات کی تردید کی ہے۔

اس ساری صورتحال کے بعد خطے میں جنگ کے بادل چھاگئے ہیں جبکہ امریکی صدر بھی اپنے اتحادی سعودی عرب کے جواب کے منتظر ہیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں