مودی کی فضائی حدود کے استعمال کیلئے درخواست پر پاکستان کا ایسا جواب سامنے آ گیا کہ مودی کو منہ کی کھانی پڑ گئی

بھارتی وزیراعظم ہاؤس سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق بھارت نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کیلئے جانے والے وزیراعظم نریندر مودی کے طیارے کو پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت طلب کی تاہم پاکستان نے اجازت دینے سے انکار کردیا۔

جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کیلئے بھارتی وزیراعظم مودی 21ستمبر کو نئی دہلی سے ائیر انڈیا ون کے ذریعے نیویارک روانہ ہوں گے جب کہ وہ 27 ستمبر کو جنرل اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کریں گے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے ویڈیو پیغام میں بتایا کہ نریندر مودی کو پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی ہائی کمشنر کو پاکستان کے فیصلے سے آگاہ کر دیا گیا ہے، بھارت نے مودی کے جرمنی جانے کیلئے فضائی حدود کے استعمال کی اجازت مانگی تھی، نریندر مودی کیلئے 20 ستمبر اور 28 ستمبر کی اجازت مانگی گئی تھی لیکن مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور بھارتی رویے کےباعث اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا۔

اس کے قبل جون میں پاکستان نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو اپنی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دی تھی۔

رواں ماہ 7 ستمبر کو پاکستان نے بھارتی صدر کی جانب سے فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست بھی مسترد کر دی تھی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں