حکومت گرانے میں ”مولانا “کی کس ملک کی ایجنسی نے مدد کی ؟

لاہور(رپورٹ:اسد مرزا)مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے رہنماﺅں نے اپنے خلاف کرپشن کیسز کو ختم کرانے ، نیب اور حکومت پر دباﺅ ڈالنے کے لئے مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ اور دھرنے کو سپانسر کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا ہے ۔ ایک خفیہ ایجنسی نے وزیر اعظم پاکستان اور متعلقہ حکام کو بھجوائی گئی رپورٹ میں انکشاف کیا کہ حسین نواز نے جے یو آئی کے امیر کو مختلف ذرائع سے 50کڑور روپے کی خطیر رقم بھجوائی ہے تا کہ وہ آزادی مارچ اور دھرنے کے انتظامات کو حتمی شکل دے سکیں اور انہیں دھرنے کے دوران خوراک ،ٹرانسپورٹ اور دیگر سہولتوں میںکمی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ ایک ہمسایہ ملک کی خفیہ ایجنسی بھی عمران خان کی حکومت کو گرانے کے لئے مبینہ طور پر مولانہ فضل الرحمن کو فنڈنگ کر رہی ہے اس بارے ذمہ دار حلقوں نے باقاعدہ تحقیقات شروع کر دی ہے ۔بتایا گیاہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کی ہدایت پر پیپلز پارٹی نے بھی بھی آزادی مارچ اور دھرنے کے لئے جے یو آئی کی قیادت کو خطیر رقم فراہم کرنے کے علاوہ انہیں افرادی قوت بھی فراہم کرنے کی یقین دہانی کروائی ہے ۔

واضع رہے کہ اس سے قبل جیل میں بند مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز اور انکے شوہر کیپٹن (ر ) محمد صفدر نے مسلم لیگ ن علما مشائخ ونگ کے سربراہ علامہ فاروق سعیدی کی وساطت سے مولانہ فضل الرحمن کو دھرنے کے لئے لوگوں کو تیار کرنے کے لئے خطیر رقم دے چکے ہیں ۔ اس حوالے سے علامہ فاروق سعیدی کا کہنا ہے کہ وہ اپوزیشن کی تمام سیاسی اور مذہبی جماعتوں سے ملکر میاں محمد نواز شریف ، مریم نواز اور حمزہ شہباز شریف کی رہائی کے لئے احتجاج اور اسلام آباد کی جانب مارچ کرینگے اس حوالے سے تمام جماعتوں سے میٹنگز ہو رہی ہیں۔جس کے تمام اخراجات مسلم لیگ ن علما مشائخ ونگ برداشت کریگا ۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں