- Advertisement -

جس کی گھڑی ہے وہ چاہے بیچے، پھینکے، رکھے، یا کسی کو تحفہ دے، فواد چودھری

- Advertisement -

سابق وفاقی وزیر فواد چودھری کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان کا توشہ خانے والی گھڑیاں بیچنا ان کا حق تھا۔
 فواد چودھری نے کہا کہ جس کی گھڑی ہے وہ چاہے بیچے، پھینکے، رکھے، یا کسی کو تحفہ دے، دوسرا کون ہوتا ہے اس سے پوچھنے والا؟
انہوں نے کہا کہ گھڑی بیچنے سے زیادہ عجیب بات ہے کہ ملک کا وزیراعظم 16 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کرے۔ زرداری صاحب نے بی ایم ڈبلیو لے لی تھی، گیلانی صاحب نے گاڑی لے لی، آپ سب کا توشہ خانہ کھولیں کوئی مسئلہ نہیں ہے۔
فواد چودھری نے یہ بھی بتایا کہ انہوں نے عمران خان کو کہا تھا کہ آپ وزیراعظم ہیں، آپ کا حق کا سڑک بنوانا لیکن انہوں نے سرکاری مال استعمال نہیں کیا، اور گھڑی بیچ کر سڑک کی تعمیر کرائی۔
واضح رہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان نے توشہ خانے سے 15 کروڑ 40 لاکھ روپے کی تین قیمتی گھڑیاں خرید کر اسلام آباد کے واچ ڈیلر کو فروخت کیں اور مجموعی طور پر 3 کروڑ 60 لاکھ روپے حاصل کیے، تاہم عمران خان کا موقف ہے کہ انہوں نے یہ گھڑیاں بیچ کر بنی گالہ کی سڑک کا کام مکمل کرایا۔
یہ تینوں گھڑیاں مشرق وسطیٰ کے خلیجی جزیرے کے شاہی خاندان کے ایک فرد اور اسی جزیرے کے ایک معزز شخص نے دی تھیں۔