الیاس فخفاخ تیونس کے نئے وزیراعظم مقرر

تیونس کے صدر قیس سعید نے سابق وزیرخزانہ الیاس الفخفاح کو وزیراعظم مقرر کرتے ہوئے انہیں کابینہ تشکیل دینے کی دعوت دی ہے۔نئے وزیراعظم الفخفاح کو ملک کو موجودہ معاشی بحران سے نکالنے اور عوامی مطالبات کے اہم چیلنجز کا سامنا کرنا پڑے گا۔

مختلف سیاسی جماعتوں کی طرف سے وزارت عظمیٰ اور موجودہ وزیراعظم یوسف الشاھد کی جگہ نئے سربراہ حکومت کے لیے 20 نام پیش کیے تھے۔ صدر مملکت کی طرف سے ‘تحیا تیونس’ اور ڈیموکریٹک پارٹی کے حمایت یافتہ امیدوار الفخفاح کو وزیراعظم نامزد کرتے ہوئے انہیں حکومت تشکیل دینے کی دعوت دی تھی۔

حکومت کی تشکیل کے لیے نامزد وزیراعظم الفخفاح کے پاس ایک ماہ کی مہلت ہے۔ انہیں حکومت کی تشکیل کے بعد پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنا ہوگا۔ حکومت کو موجودہ پارلیمنٹ کے 217 ارکان میں سے کم سے کم 109 کی حمایت حاصل کرنا ہوگی۔

اگر حکومت پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام رہتی ہے تو پارلیمنٹ تحلیل کرنے کی سفارش کی جائے گی۔ اس وقت تیون کی پارلیمنٹ میں مذہبی سیاسی جماعت تحریک النہضہ اور قلب تیونس کی اکثریت ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...