- Advertisement -

سپریم کورٹ فون ٹیپنگ کا ازخود نوٹس لے، پی ٹی آئی کا مطالبہ

- Advertisement -

تحریک انصاف کی قیادت نے بشریٰ بی بی کی آڈیو ٹیپ میں مخالفین کے خلاف مہم، غداری کے الزامات اور سازش کا بیانیہ بنانے کی ہدایات کو ایک طرف رکھ کر اصل مسئلہ ٹیپنگ کو قراردے دیا جب کہ سپریم کورٹ سے اس معاملے پر از خود نوٹس لینے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔
اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنما اور سابق وفاقی وزیر شیریں مزاری نے کہا کہ آڈیو میں جو بھی ہے وہ غیر ضروری ہے، اصل بات وزیراعظم کی فون ٹیپنگ ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود فون ٹیپنگ ہورہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ اس میں امریکا کی جانب سے کتنی مدد ہورہی ہے؟ سوچنا چاہیے کہ امریکا نے فون ٹیپنگ میں کتنی مدد کی۔
پی ٹی آئی رہنما نے سپریم کورٹ سے ٹیپنگ پر از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومتی مسئلوں پر وزیراعظم کی گفتگو لیک کرنا آئین پاکستان کی خلاف ورزی ہوگی، سپریم کورٹ نے بے نظیر کی حکومت فون ٹیپنگ پر ختم کردی تھی، نیوٹرلز اور حکومت کو عمران خان کی کرپشن سے متعلق کچھ نہیں مل رہا۔