عالمی میڈیا نے بھارت کے اصل اور شرمناک ترین چہرہ کو بھرپور انداز میں ایکسپوز کر دیا

نئی دہلی (ویب ڈیسک) انٹرنیشنل میڈیا نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ بھارت کے دوران رتشدد بھارت کا اصل اور شرمناک چہرہ بھرپور انداز میں ایکسپوز کیا ہے۔ انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق جہاں ایک طرف ڈونلڈ ٹرمپ نے بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کا دورہ کیا، وہیں دوسری طرف دہلی دنگے فساد کی زد میں رہا۔ دہلی کے مسلمان شہریت کے متنازع قانون کیخلاف سڑکوں پر نکل آئے اور مظاہرے کرنے لگے جبکہ آر ایس ایس کے غنڈوں نے مسلمانوں پر حملوں کا آغاز کردیا۔
انٹرنیشنل میڈیا کی رپورٹس کے مطابق جب ٹرمپ اور ان کی بیوی میلانیا ٹرمپ کو نئی دہلی میں سرکاری اسکول کا دورہ کروایا جا رہا تھا، عین اسی وقت دہلی کے علاقے اشوک نگر میں ہندوانتہا پسندوں نے مسجد پر حملہ کردیا۔

آر ایس ایس کے غنڈوں نے دہلی میں مساجد کو بھی شہید کرنا شروع کردیا۔ ہندوانتہا پسندوں نے اشوک نگر کی مسجد میں لاؤڈ اسپیکر اکھاڑ دیئے اور مینار پر بھارتی جھنڈے لہرا دیئے۔

دہلی میں آر ایس ایس کے غنڈوں نے مسلمانوں کے گھروں کو بھی جلا کر راکھ کردیا۔ اس حوالے سے مسلمانوں کو کہنا ہے کہ نئی دہلی پولیس نے انتہا پسند ہندوؤں کو روکنے کی بجائے ان کا ساتھ دیا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ بھارت کے دوران دارالحکومت دہلی میدان جنگ بنا رہا۔ شمالی دہلی میں ہندو مسلم فسادات پھوٹ پڑے ہیں۔ بجھن پورا میں شہریت کے متنازع کالے قانون کے حامیوں اور مخالفین کے درمیان جھڑپیں ہوئیں، مشتعل افراد نے گاڑیوں اور دوکانوں کو نذر آتش کر دیا، جھڑپوں کے دوران فائرنگ سے اب تک 11 افراد ہلاک جبکہ 150 سے زائد افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

مودی کی مسلمانوں کے خلاف بھڑکائی گئی نفرت کی آگ نے بھارت کو ہی لپیٹ میں لے رکھا ہے، شمالی مشرقی دہلی میں فسادات پھوٹ پڑے ہیں۔ تاہم اب انٹرنیشنل میڈیا نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ بھارت کے دوران ہونے والے مظاہروں کے حوالے سے خصوصی رپورٹس پیش کی ہیں۔ انٹرنیشنل میڈیا اب پہلی مرتبہ کھل کر بھارت کی منافقت کو عیاں کر رہا ہے۔ اب کھل کر کہا جا رہا ہے کہ بھارت ایک سیکولر ملک کی بجائے فاشسٹ ہندو اسٹیٹ بن چکا ہے، جہاں مسلمانوں کو کھلے عام قتل عام کیا جا رہا ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...