پاکستانی گلوکارہ نے اذان ”گا“ دی، سوشل میڈیا پر طوفان برپا ہوگیا

اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک)سستی شہرت کے لیے ہلکے لوگ نجانے کیا کچھ حربے آزماتے رہتے ہیں۔ اب ایک پاکستانی نژاد کینیڈین گلوکارہ ، جو اتنی باصلاحیت ہے کہ کوئی اس کا نام تک نہیں جانتا، نے کچھ پہچان بنانے کے لیے اذان کو بطور گیت گا دیا ہے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اس خاتون کا نام عروہ خان ہے جس نے اذان ’گانے‘ کی ویڈیو اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر پوسٹ کی ہے جس سے سوشل میڈیا پر ایک ہنگامہ برپا ہے۔

اس ویڈیو میں جینز اور ٹی شرٹ پہنے، بازوﺅں پر ٹیٹو بنوائے یہ خاتون ریکارڈنگ سٹوڈیو میں یہ اذان کے الفاظ پر مبنی یہ گیت ریکارڈکروا رہی ہوتی ہے۔اپنی پوسٹ میں انسٹاگرام پر وہ لکھتی ہے کہ ’رمضان مبارک‘ جیسا کہ میں کراچی میں پیدا ہوئی اور کینیڈا میں پلی بڑھی، میری یادداشت میں اذان کے وہ الفاظ آج بھی محفوظ ہیں جو میں کراچی میں بچپن میں سنتی تھی۔ اس رمضان مجھے خیال آیا کہ آج تک میں نے کسی خاتون کی آواز میں اذان نہیں سنی اور شاید کبھی سن بھی نہ سکوں چنانچہ میں نے خود اذان پڑھنے کا فیصلہ کیا۔

View this post on Instagram

Ramadan Mubarak! As a Karachi born Canadian Pakistani, my memory of the Azaan is ingrained in early childhood experience. The crackling loud speakers, the daily rituals, all part of a youth gone, but not forgotten. It dawned on me this Ramadan that I had never heard the Azaan sung with a woman's voice, and likely never would. Therefore, I decided to undertake the task myself. I do this not out of spite, or to cause anger. I do it out of reverence and respect during this holy time, and to underscore the idea that the limitless love of God includes all, not just some. . . . . . . #ramadan #ramadan2020 #urvahkhan #calltoprayer #azaan #adhan #muslim #islam #queer #lgbt #pakistani #Canadian #female #rocker #rapper #punk #accapella

A post shared by Urvah Khan عروه خان (@scrappylilbrowngal) on

کمنٹس میں لوگ اس خاتون کی اس حرکت پر کڑی تنقید کر رہے ہیں۔ ایک صارف نے لکھا ہے کہ ”پہلے عربی پڑھنا سیکھ لو میڈم اور پلیز اگر آپ اسلام کی پیروی نہیں کرتی ہو تو ٹھیک ہے لیکن اس طرح کی گھٹیا حرکت مت کرو۔ تمہاری یہ پوسٹ دیکھ کر مجھے شرمساری ہو رہی ہے۔ خدا تمہارے اس جرم کو معاف کرے۔“ایک اور صارف نے لکھا کہ ”میری بہن یہ کوئی گیت نہیں ہے۔ پلیز یہ ویڈیو ڈیلیٹ کر دیں، تمہیں اسلام اور اذان کے متعلق سیکھنے کی ضرورت ہے۔“ایک صارف نے لکھا کہ ”تم یہ بھی نہیں جانتیں کہ رمضان مبارک کیا ہے، لہٰذا ایسی حرکتیں مت کرو اور یہ ویڈیو ابھی ڈیلیٹ کر دو۔“

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...