شہری نے ایک کلو سونا اپنے جسم کے کس مخصوص حصے میں چھپایاتھا؟ نئے اور شرمناک طریقے نے سب کو ہکا بکا کردیا

جے پور(ویب ڈیسک) دُنیا بھر میں منشیات اور سونے کی سمگلنگ کے نِت نئے طریقے اپنائے گئے ہیں۔ کسی نے اپنے کپڑوں یا سامان میں اسمگلنگ کا سامان چھُپا رکھا ہوتا ہے تو کسی نے پیٹ میں چھُپایا ہوتا ہے۔ تاہم بھارت میں اسمگلنگ کے ایک ایسے انوکھے طریقے کا انکشاف ہوا ہے جس نے لوگوں کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ہوا یوں کہ بھارتی ریاست راجستھان کے ضلع جے پور کے انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر کسٹم حکام نے ایک ایسے نوجوان کو گرفتار کیا جس نے سونے کی اسمگلنگ کے لیے بڑا ہی منفرد طریقہ اپنایا تھا، اگرچہ وہ اپنی اس انوکھی کوشش میں کامیاب نہ ہو سکا، مگر اُس کی یہ حرکت اخباروں اور چینلز کے لیے اچھوتی خبر بن گئی۔

کسٹم حکام نے بتایا کہ 30 سالہ بھارتی نوجوان نے تھائی لینڈ کی فلائٹ پکڑنی تھی، تاہم اُس کی تلاشی کے دوران اُس کے جسم کے پچھلی جانب سے سونے کے چھ ٹُکڑے برآمد ہوئے، جن کا کُل وزن ایک کلو کے لگ بھگ بنتا تھا۔
پنکج سادُووانی نامی اس نوجوان پر اُس وقت شک پڑا جب ایئرپورٹ پر اُس کی چال عجیب طرح سے دکھائی دی اور وہ بہت تکلیف میں بھی دکھائی دیتا تھا۔

جس پر اُس کی جامہ تلاشی دی گئی تو کسٹم حکام کی حیرت کی انتہا نہ رہی جب اُس کے جسم کے مخصوص حصّے سے پُورا ایک کلو سونا برآمد ہوا۔ پنکج کو فوری طور پر گرفتار کر لیا گیا۔ جہاں اُس نے بتایا کہ یہ سونا تھائی لینڈ سمگل کیا جانا تھا۔ اُس کی ایک فوٹو تھائی لینڈ کے ایک اسمگلر گروپ کو بھیج دی گئی تھی جنہوں نے اُس سے یہ سونا ایئرپورٹ کے باہر وصول کرنا تھا۔ سادو وانی سے مزید تفتیش جاری ہے۔ جس جس تک بھی یہ خبر پہنچی ہے، وہ اسے ناقابلِ یقین قرار دے رہا ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں