کیا عمران خان کی حکومت اپنی مدت پوری کرے گی؟اوریا مقبول جان نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

لاہور( آن لائن)ملک کے معروف تجزیہ کار اور کالم نگار اوریا مقبول جان نے کہا ہےکہ اگر حالات جیسے ہیں ایسے ہی چلتے رہے تو جیسے آصف زرداری اور نواز شریف نے رو پیٹ کر اپنی مدت پوری کر لی تھی عمران خان بھی رو پیٹ کر پانچ سال پورے کر لیں گے لیکن مجھے اس سال کے درمیان میں کچھ ایسی چیزیں آ جائیں گی جس سے کچھ بھی ہو سکتا ہے،چائنہ کے ساتھ بھارت کا معاملہ مزید چلتا رہا تو اپنا فیس بچانے کے لئےنریندر مودی پاکستان پر حملہ کر دے گا۔

تفصیلات کے مطابق معروف صحافی اور نجی ٹی وی کے ایگزیکٹو پرڈیوسر رضوان جرال کے یو ٹیوب چینل "زمین زاد” میں گفتگو کرتے ہوئے اوریا مقبول جان کا کہنا تھا کہ اس وقت انڈیا کے سامنے تین چار ملک کھڑے ہو گئے ہیں ،یہ لڑائی عالمی طاقتیں بھی چاہتی ہیں جبکہ چین کی ضرورت ہےکہ اِن حالات میں پاکستان میں ایک مستحکم حکومت ہو اور اس کےلئے ملک میں کسی بھی وقت تبدیلی ہو سکتی ہے،جہاں تک اپوزیشن کا تعلق ہے تو دور دور تک عمران خان کی کوئی اپوزیشن نظر نہیں آتی۔ایک سوال کے جواب میں اوریا مقبول جان کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں عمران خان کا کوئی متبادل نہیں ہے لیکن "متبادل”پیدا ہوئےدیرنہیں لگتی،وقت بڑی عجیب و غریب چیز ہے،کسی کواندازہ تھاکہ شاہد خاقان عباسی نواز شریف سے زیادہ بہتر وزیر اعظم ثابت ہو گا ؟متبادل پیدا ہونے میں دیر نہیں لگتی صرف چند سیکنڈ ہی چاہئے ہوتے ہیں۔

ایک اور سوال کے جواب میں اوریا مقبول جان کا کہنا تھا کہ اگر عمران خان گئے تو اس کی وجہ معاشی حالت نہیں کوئی اور وجہ ہو گی،معاشی حالت تو اسی طرح چلتی رہے گی،آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک اپنے محتاج ملکوں کو ڈبوتے نہیں بلکہ ایسے ملکوں کو وہ دیوالیہ بھی نہیں ہونے دیتے اورچلتے رہنے دیتے ہیں تاکہ اِن”دکانوں "سے اُن کے قرضوں کی قسط آتی رہے،اس لئے آپ یقین رکھیں کہ معاشی حالت کی بجائے اگر کوئی بڑی ناراضگی نہ ہوئی تو عمران خان کی حکومت چلتی رہے گی ،دوسری بات یہ کہ اگر عمران خان کی ایگو سے کسی کے ساتھ مسئلہ نہ بنا تو حکومت چلتی رہے گی لیکن یہ بھی یاد رکھیں عمران خان میں ایگو آتے ہوئے دیر نہیں لگتی۔اوریا مقبول جان کا کہنا تھا کہ میرا خیال ہے کہ انڈیا اب پاکستان کے ساتھ فائنل باکس میں آئے گا ،اگر چائنہ کی صورتحال مزید چلتی رہی تو نریندر مودی اپنا فیس بچانے کے لئے پاکستان پر حملہ کردے گا ۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...