زمین کے گہرے ترین مقام پر پاکستانی پرچم لہرا دیا گیا

پاکستان کی خیر سگالی سفیر ونیسا اوبرائن نے بحر اوقیانوس کے 10 ہزار 923 میٹر گہرے سمندر میں پاکستان کا پرچم لہرایا

لاہور(ویب ڈیسک) زمین کے گہرے ترین مقام پر پاکستان پرچم لہرا دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کی خیر سگالی سفیر ونیسا اوبرائن نے بحر اوقیانوس کے 10 ہزار 923 میٹر گہرے سمندر میں پاکستان کا پرچم لہرایا ہے۔ جس مقام پر جا کر انہوں نے پرچم لہرایا ہے، اس کا اندازہ لگائے جائے تو تو یہ اتنی ہے کہ اگر سمندر کے اندر ماؤنٹ ایورسٹ کو ڈال دیا جائے گا تو تب بھی وہ اس پوائنٹ سے 2 میٹر دور ہوگا۔

امریکی خاتون بحر اوقیانوس کے سب سے گہرے حصے پر پہنچنے کے بعد دنیا کی وہ پہلی خاتون بن گئی ہیں جنہیں زمین کے سب سے اونچے اور نچلے حصے پر پہنچنے کا اعزاز حاصل ہے۔ خاتون کا اس موقع پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ان کا اس قدر گہرائی میں جانے کا مقصد یہ بھی تھاکہ وہ مشرقی سمندر کا پانی اور چٹان کے نمونے سائنسی پیمائش کے لئے لے کر آئی ہیں۔
اس موقع پر برطانیہ میں پاکستان کے ہائی کمشنر نفیس ذکریا نے ونیسا کو مبارکباد دی جو اب پہلی خاتون ہیں جنہوں نے 2017 میں پاکستان کی بلند ترین قراقرم کی کے ٹو چوٹی سر کی تھی اور اب یہ ‘چلینجر ڈیپ’ کے مشن میں بھی کامیاب ہوگئی ہیں۔ پاکستان کی خیر سگالی سفیر ونیسا کو پاکستان کا جھنڈا بھی پیش کیا گیا۔ خیال رہے کہ اس سے قبل بھی دنیا کے بیشر ممالک میں پاکستان کا جھنڈا بلند ہوتا رہا ہے جس میں کچھ عرصل قبل کورونا، سوئٹزرلینڈ کا پہاڑ پاکستانی پرچم کے رنگ میں ڈھل گیا تھا۔

سوئس انتظامیہ کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف پاکستان سے اظہارِ یکجہتی کی گئی تھی، اس سلسلے میں سوئٹزرلینڈ میں واقع پہاڑ ’میٹرہارن‘ کو پاکستانی پرچم کے رنگ میں ڈھال دیا گیا تھا۔ اس حوالے سے بتایا گیا تھا کہ سوئٹزرلینڈ میں کوہ ایلپس کے پہاڑی سلسلے میں واقع 4 ہزار 400 میٹر بلند ہارن نامی پہاڑ پر سبز ہلالی پرچم بنا یا گیا تھا، پہاڑ پر پرچم روشنیوں کی مدد سے پراجیکٹ کیا گیا تھا۔ تا ہم اب زمین کے گہرے ترین مقام پر بھی امریکی خاتون کی جانب سے پاکستان پرچم لہرا دیا گیاہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...