پولیس کی بڑی کاروائی 24 گھنٹوں میں چار کروڑ کی چوری ہوئی رقم برآمد

لاہور(حمزہ رحمٰن) حالیہ روز پنجاب پولیس کی قابلِ دید کاروائی نے پولیس کی ایمیج بلڈنگ میں اس وقت بڑا کردار ادا کیا جب لاہور کی تھانہ حدود ڈیفنس ‘سی’ میں پولیس نے 24 گھنٹوں کے اندر چوری کے ملزمان کو پکڑ کر انسے چار کروڑ سے زائد کی برآمدگی کی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ڈیفنس فیز ‘سی’ کی تھانہ حدود میں واقع ایک نجی پراپرٹی ایڈوائزر کے دفتر میں واردات ہوئی پولیس کو اطلاع ملنے کے بعد ایس پی انویسٹی گیشن کینٹ کپٹن (ر) علی بن طارق کی ہدایت پر بر وقت کاروائی کی گئی، جس کے نتیجہ میں انچارج انوسٹیگیشن تھانہ ڈیفنس ‘سی ‘ عدنان مسعود نے چند گھنٹوں میں ہی اپنی ٹیم کے ہمراہ واردات ٹریس کر لی، اور نہ صرف کاروائی کرتے ہوئے ملزمان کو پکڑا بلکہ چوری شدہ رقم بھی برآمد کر لی۔

زرائع کا کہنا ہے کہ عدنان مسعود کو ڈیفنس ‘سی’ میں جرائم کی بڑھتی شرح کو روکنے کے لیے چند ماہ قبل تعینات کیا گیا تھا، وہ اس سے پہلے بھی اپنے فرائض کی ادائیگی میں اور کیس کلوز کرنے کے لیے انوسٹی گیشن کے دوران سیف سٹی کے سیکیورٹی پلانز کو استعمال کرنے میں ماہر سمجھے جاتے ہیں۔

ڈی ایچ اے پاکستان کی بڑی رئیل اسٹیٹ ایجنٹس کی مارکیٹ سمجھی جاتی ہے، اور پنجاب پولیس کی اس کاروائی سے الخدمت گروپ DHA لاہور اسٹیٹ ایجنٹس کے جنرل سیکٹری زاہد بن صادق کا کہنا ہے کہ ایسے مشکل وقت میں جہاں کیش کا لین دین اور اسکی ہینڈلنگ ایک مشکل مرحلہ سمجھا جاتا ہے میں پولیس کی یہ کاروائی کاروباری حلقے کے لیے بہت خوش آئند بات ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...