چین سے مذاکرات کے بعد بھارت کی بڑی شکست، اپنے کئی علاقوں سے محروم ہوگیا، چین نے سب سے اہم علاقے کا قبضہ چھوڑنے سے صاف انکار کر دیا

نئی دہلی (ویب ڈیسک ) چین سے مذاکرات کے بعد بھارت کی بڑی شکست، اپنے کئی علاقوں سے محروم ہوگیا، چین نے سب سے اہم پانگونگ تسو جھیل تسو جھیل کے علاقے کا قبضہ چھوڑنے سے صاف انکار کر دیا، حالیہ جھڑپوں کے بعد چین 8 کلو میٹر بھارتی علاقے کا کنٹرول حاصل کر چکا۔ تفصیلات کے مطابق چین کیساتھ لداخ کے علاقے میں ہونے والی جھڑپوں کا معاملہ بھارت کیلئے گلے کی ہڈی بن گیا ہے۔

بھارت کے میڈیا کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ دونوں ممالک تمام معاملات پرامن طریقے سے حل کرنے کیلئے راضی ہوگئے ہیں، تاہم حقیقت یہ ہے کہ چین کیساتھ لیا گیا پنگا بھارت کیلئے اس کی تاریخ کی شرمناک ترین شکست بن گیا ہے۔ بھارتی میڈیا دعویٰ کر رہا ہے کہ چین نے بھارت کے جن علاقوں پر قبضہ کیا تھا، وہ ان علاقے سے پیچھے ہٹ گیا ہے۔
تاہم بتایا گیا ہے کہ چین نے ایسا کچھ نہیں کیا۔

چین سے مذاکرات کے بعد بھارت اپنے کئی علاقوں سے محروم ہوگیا ہے۔ لداخ میں بھارتی فوج تاریخی طور پر پٹرولنگ پوائنٹ 14، 15، 17 اور 17 اے میں پٹرولنگ کرتے رہے ہیں۔ لیکن اب بفر زون کے معاہدے کا مطلب ہے کہ اب یہ علاقے بھارت کی رسائی سے باہر ہوں گے۔ جبکہ چین پانگونگ تسو جھیل کے علاقے سے انخلا پر بات کرنے کیلئے تیار نہیں۔ چین نے یہاں فنگر 4 اور فنگر 8 کے درمیان کے 8 کلو میٹر بھارتی علاقے پر قبضہ کر رکھا ہے۔

اسی لیے بھارت میں آوازیں اٹھنے لگی ہیں کہ چین سے مذاکرات کے نتیجے میں بھارت کا فائدہ نہیں بلکہ نقصان ہوا ہے۔ بھارت کو شکست کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ بھارتی فوج میں بھی اس حوالے سے تشویش پائی جا رہی ہے۔ اس حوالے سے بھارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ چینی فوجی پہلے سے 2 کلو میٹر کے علاقے میں بیٹھے ہیں جس کا بھارت روایتی طور پر دعوے دار، قابض اور وہاں گشت بھی کرتا رہا ہے۔

اب یہ طے پایا ہے کہ دونوں طرف کے فوجی 2 ، 2 کلومیٹر تک پیچھے ہٹیں گے اور 4 کلومیٹر کا بفر زون قائم ہو جائیگا جوکہ مکمل طور پر بھارتی علاقے میں ہے۔ یہاں چین نے یہ چال چلی ہے کہ پانگونگ تسو جھیل کا قبضہ بھی نہیں چھوڑ رہا، جبکہ جو علاقے پہلے بھارت کے کنٹرول میں تھے، ان ہی علاقوں پر مشتمل بفر زون بنا کر بھارت کو وہاں سے باہر کر دیا ہے۔ یہاں یہ واضح رہے کہ کچھ روز قبل لداخ کے لحاذ پر ہونے والی جھڑپوں کے دوران چینی فوجیوں نے بھارت کے 20 فوجی ہلاک کر ڈالے تھے۔ جبکہ اسی دوران بھارت کے زیر کنٹرول کافی علاقے اپنے قبضے میں بھی لے لیے تھے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...