آصف زرداری رحمان ڈکیٹ سے کیا کام کرتے تھے ؟ تہلکہ خیز تفصٰلات

کراچی (ویب ڈیسک)رکن قومی اسمبلی عبدالشکور شاد نے دعویٰ کیا ہے کہ سال 2008کے انتخابات میں آصف زرداری نے رحمان بلوچ کو فون کیا۔آصف زرداری نے رحمان بلوچ کو کہا تھا کہ ہمارے امیدوار کوجتوائیں۔پی ٹی آئی ایم این اے شکور شاد نےدعویٰ کیا کہ آصف زرداری نے کہا تھا ہم سارے کیس ختم کرائیں گے

جبکہ رحمان بلوچ کو سینیٹرشپ بھی آفر کی گئی۔عبدالشکورشاد نے مزید بتایا کہ رحمان بلوچ چاہتا تھا کہ فنڈزاس کے ذریعے استعمال ہوں تاہم جن لوگوں کو رحمان بلوچ نے الیکشن میں جتوایا،انہوں نے ہی اسے مروادیا۔دوسری جانب سابق سیکٹر کمانڈر سندھ رینجرز بریگیڈیئر (ر) باسط شجاع نے انکشاف کیا کہ کسی بھی جگہ پر کوئی جرم نہیں ہو سگتا جب تک سیاسی مدد حاصل نہ ہو ۔ پیپلزپارٹی کے لیڈران عزیربلوچ سے رابطےتھے، وزیراعلیٰ اور فریال تالپور عزیر بلوچ کے گھر عشائیے پر جاتے اور ملاقاتیں کرتے تھے۔بریگیڈیئر(ر)باسط شجاع کے مطابق عزیربلوچ نے اعتراف کیا کہ وہ افسران کے تبادلے کراتا تھا عزیربلوچ کو کچھ سیاسی لوگ تحفظ دے رہےتھے اور کچھ سیاسی لوگوں کی مددسے وہ ملک سےباہربھاگ گیا تھا۔عزیز بلوچ نے 198 لوگوں کے قتل اور غیر ملک کے لیے جاسوسی کا اعتراف کیا ، اسے سندھ حکومت کی سرپرستی حاصل تھی ۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...