پاکستان علماء کونسل نے مندر کی تعمیر کی حمایت کا اعلان کردیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان علما کونسل نے مندر کی تعمیر کے لئے حمایت کا اعلان کر دیا ہے۔ اس حوالے سے بات کرتے ہوئے چیئرمین پاکستان علما کونسل محمد طاہر محمود اشرفی کا کہنا تھا کہ ہم مندر بنانے کے تنازعے کی مذمت کرتے ہیں، آئین پاکستان مسلمانوں اور غیر مسلموں کے حقوق کا محافظ ہے، دارالافتاء پاکستان اور پاکستان علماء کونسل اپنی تجاویز اسلامی نظریاتی کونسل میں پیش کرے گا۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہمارا آئین یہاں اقلیتوں کو ہر قسم کی عبادت کرنے کی اجازت دیتا ہے، آئین کے مطابق پاکستان میں اقلیتوں کو اپنی عبادت گاہ رکھنے اور اپنے عقیدے اور روایت کے مطابق زندگی گزارنے کی اجازت ہے، شرعیت نے بھی تمام غیر مسلموں کو یہ حق دیا ہے۔
علامہ طاہر اشرفی کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں غیر مسلموں کی عبادت گاہیں تعمیر ہوئی ہیں پاکستان علماء کونسل عالمی امن کونسل کے تعاون سے مختلف مکاتب فکر اور مذاہب کے قائدین کا اجلاس بلا رہی ہے جس میں ملک کی موجودہ صورتحال کے بارے میں مشترکہ اعلامیہ طے کیا جائے گا۔

بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان علماء کونسل ملک میں بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے فرنٹ لائن کردار ادا کررہی ہے اور ہم اسے جاری رکھیں گے۔ بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک بین الاقوامی معاہدے کے مطابق وجود میں آیا ہے اور پاکستان کی غیر مسلم آبادی ملک کے استحکام کے لئے انتہائی مثبت اور موثر کردار ادا کررہی ہے، مندر بنانے سے کسی کے عقیدے کا نقصان نہیں ہو رہا اور نہ ہی ملک کو کسی قسم کا نقصان پہنچ رہا ہے۔

مولانا طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ ملک میں مذہبی اقلیتوں کے لئے درجنوں عبادت گاہیں قائم کی گئیں اور حال ہی میں حکومت نے سکھ یاتریوں کے لئے کرتار پور راہداری تعمیر کی، اس لئے مندر بنانے پر بھی کسی کو اعتراض نہیں ہونا چاہیئے۔ بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہمارا بس یہ کہنا ہے کہ پاکستان میں رہتے ہوئے کسی انتہا پسند کو اتنی اجازت نہیں دینی چاہیئے کہ وہ کسی اقلیت کو نقصان پہنچائے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...